آپ بظاہر ٹیم لگتے ہو لیکن حقیقت اس کے برعکس ہے، قومی ٹیم ہیڈ کوچ

Gerry Christian pak head coach

قومی ٹیم ہیڈکوچ گیری کرسٹن کا ورلڈکپ میں ناقص کارکردگی پرناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آپ بظاہر ٹیم لگتے ہو لیکن حقیقت اس کے برعکس ہے۔

ذرائع کے مطابق قومی گیری کرسٹن نے ڈریسنگ روم میں کھلاڑیوں سے گفتگو کے دوران کہا کہ آپ لوگ بظاہر ٹیم لگتے ہو لیکن درحقیقت ٹیم نہیں ہو۔ آپ میں اتحاد کی کمی ہے۔

نیپال کو شکست ، بنگلہ دیش ورلڈ کپ کے سپر ایٹ مرحلے میں پہنچ گیا

ذرائع نے مزید بتایا کہ گیری کرسٹن کا کہنا تھا کہ پاکستان ٹیم میں سکلز نہیں ہے اور کوئی نہیں جانتا اس نے کس وقت کونسی شارٹ کھیلنی ہے ۔

دوسری جانب گزشتہ روز آئرلینڈ سے آخری میچ جیتنے کے بعد قومی کرکٹ ٹیم کپتان  بابر اعظم کا کہنا تھا کہ کسی ایک کھلاڑی پر ورلڈ کپ کی ہار کا ملبہ نہیں ڈالنا چاہیے۔ میں ہار کی ذمہ داری لینے کو تیار ہوں لیکن ٹیم میں باقی کھلاڑیوں کو بھی ذمہ داری لینا ہوگی۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے بطور ٹیم اس ٹورنامنٹ میں اچھی کرکٹ نہیں کھیلی۔ واپس جاکر چئیرمین سے بات کرونگا وہ جو پوچھیں گے اس کا جواب دوں گا۔  ہمیں مائنڈ سیٹ نہیں ہمیں گیم کی آگاہی کی ضرورت ہے۔

بابر اعظم نے کہا کہ ہم نے اہم موقع پر چانسز گنوائے۔ امریکہ میں پچز بلے بازوں کیلئے مشکل تھی۔ آئی سی سی کو فرینڈلی پچز بنانا چاہیے۔  صرف ہم نے نہیں بلکہ امریکہ میں کھیلنے والی دیگر ٹیموں کے بلے بازوں کو بھی مشکلات آئیں۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ ، سری لنکا نے نیدر لینڈز کو 83 رنز سے ہرا دیا

انکا مزید کہنا تھا کہ عماد اور محمد عامر نے اس ٹورنامنٹ میں اچھی کارکردگی دکھائی ہے، محمد عامر سینئر بولر ہیں انہیں تجربہ ہے کہ کیسے باولنگ کرنی ہے۔

خیال رہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم ناقص کارکردگی کی وجہ سے ورلڈکپ کے پہلے مرحلے میں ہی باہر ہو گئی ہے۔

 


متعلقہ خبریں