اختراقبال ڈار نے تحریک انصاف کی ٹکٹوں کو جعلی قراردیدیا

تحریک انصاف

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (نظریاتی ) اختراقبال ڈار نے پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کی ٹکٹوں کو جعلی قراردیے دیا۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئےچیئرمین تحریک انصاف نظریاتی اختراقبال ڈار نے کہا کہ بلے والے کو بلے باز نے جگہ نہیں دی ، آج 12 سے ایک بجےکےبعدافواہیں گردش کر رہی تھیں، پی ٹی آئی (این )کے تمام امیدواروں کو میں نے خود ٹکٹ جاری کیے ہیں۔

 الیکشن کمیشن کا پی ٹی آئی کےبلے بازکے پلان بی پر نیا حکمنامہ جاری

انہوں نے کہا کہ ہم تمام آروز کو پی ٹی آئی (این )کے امیدواروں کی لسٹ جاری کریں گے ،لیکن انہوں نے کہاں سے ٹکٹ لیے اور کیسے جاری کیے یہ ان سے پوچھا جائے گا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نظریاتی کا کہنا تھا کہ میری ٹکٹ پر واضح بلے باز کا نشان ہے ، 2018میں جو ٹکٹ ہم نے جاری کیے وہی اس بار بھی کر رہےہیں ، اس حوالے سے اب الیکشن کمیشن نےواضح کر دیا ہے کہ کسی ایک پارٹی کا امیدوار دوسری پارٹی کا نشان استعمال نہیں کر سکتا ۔

2007میں محسوس کیا تھا کہ دھونس دھاندلی اور پیسے کی سیاست کو ختم کرنے کیلئے بات کرتے ہیں، میں نے فیصلہ کیا تھا پیسے اور دھاندلی کی سیاست ختم کرنے کیلئے پی ٹی آئی میں جانا چاہیے ، نظریاتی لوگوں کو ساتھ لے کر تب فیصلہ کیا تھا ۔

راجہ ریاض الیکشن سے دستبردار ہو گئے

اختر اقبال ڈار کا کہنا تھا کہ کرپشن کی سزا موت اور سزا و جزا کے بغیر ملک مستحکم نہیں ہو سکتا ، پی ٹی آئی این کا اپنا منشور اور آئین ہے ،کرپشن کی سزا موت کا نعرہ ہمارا ہے۔

جب تک جزا و سزا کےعمل کو لے کر نہیں چلیں گے ملک نہیں سنبھل سکتا ، جب تک کرپٹ لوگوں کو مائنس نہیں کیا جائےگا ہم ترقی نہیں کر سکتے ۔

گجرات، 5 بھائی ایک ہی ضلع سے الیکشن میں قسمت آزمانے کیلئے تیار

چیئرمین تحریک انصاف نظریاتی اختر اقبال ڈار کا مزید کہنا تھا کہ تمام سیاسی جماعتوں کے لیڈران اپنا منشور اور دعوے لے کر عوام میں جا رہے ہیں ، تبدیلی اور روٹی کپڑا مکان والے بھی آئے مگر پاکستان نیچے کیوں جا رہا ہے؟ ۔

اختر اقبال ڈار نے صحافی کے سوال ”کیا آپ جعلی ٹکٹ استعمال کرنے والوں کے خلاف کارروائی کریں گے ؟ کے جواب میں کہنا تھا کہ جنہوں نے یہ کام کیا الیکشن کمیشن کا کام ہے ان کیخلاف کارروائی کرے ، ہمارا کوئی معاہدہ نہیں ہوا ، یہ کس نے کہا ہے۔


متعلقہ خبریں