امریکہ تائیوان کو مسلح کرنے کا عمل روکے، چین

China

بیجنگ: چین نے امریکہ سے تائیوان کی آزادی کی حمایت نہ کرنے اور اس کو کسی بھی شکل میں مسلح نہ کرنے کے اپنے وعدوں کی پاسداری کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق چین کی وزارت قومی دفاع کے ترجمان ووچھیان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہم اس طرح کے ہتھیاروں کی فروخت کی سختی سے مخالفت کرتے ہیں اور اس معاملے کو امریکہ کے ساتھ بھرپور طریقے سے اٹھایا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ جزیرے کی حکمران ڈیموکریٹک پروگریسو پارٹی طاقت کے ذریعے “تائیوان کی آزادی” حاصل کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ امریکہ اسلحے کی فروخت کے ذریعے علیحدگی پسندوں کی مدد کرنے کی ضد پر قائم ہے۔ جو آبنائے تائیوان کے امن و استحکام کے لیے سب سے بڑا خطرہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: بھارت کا بنگلہ دیش کیلئے ای میڈیکل ویزا شروع کرنے کا اعلان

ترجمان نے مزید کہا کہ پیپلز لبریشن آرمی “تائیوان کی آزادی” کے لیے علیحدگی پسندوں کے تمام ترمنصوبوں کو ناکام بنانے کے لیے جنگی تیاریوں میں اضافہ کرے گی۔

واضح رہے کہ امریکہ نے تائیوان کو تقریباً 36 کروڑ ڈالر مالیت کے ہتھیاروں کی فروخت کی منظوری دی ہے۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں