نواز شریف کا بلامقابلہ مسلم لیگ ن کا صدر منتخب ہونے کا امکان

نواز شریف

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں نواز شریف کا بلامقابلہ پارٹی صدر منتخب ہونے کا امکان ہے۔

نوازشریف کو پارٹی صدر بنانے کیلئے 11 کاغذات نامزدگی حاصل کرلئے گئے،  پاکستان مسلم لیگ ن کے نئے صدر کے انتخاب کے معاملے پر کاغذات نامزدگی چاروں صوبوں، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے اعلی عہدیداروں کی جانب سے حاصل کئے گئے ہیں۔

یونانی حکومت نے مونا خان کے یونان میں داخلے پر 5 سال کی پابندی لگا دی،ملک چھوڑنے کاحکم

تمام کاغذات نامزدگی منگل کی صبح 10 سے 12 بجے کے درمیان پارٹی سیکرٹریٹ ماڈل ٹائون میں جمع کروائیں جائیں گے۔پارٹی کے 5 رکنی الیکشن کمیشن کی سربراہی رانا ثنا اللہ کر رہے ہیں جب کہ دیگر اراکین میں اقبال ظفر جھگڑا، عشرت اشرف، جمال شاہ کاکڑ اور کھیل داس کوہستانی شامل ہیں۔

مسلم لیگ ن کے الیکشن کمیشن کے مطابق غذات نامزدگی آج صبح 10 بجے سے دوپہر 12 بجے کے درمیان پارٹی سیکرٹریٹ ماڈل ٹائون میں جمع کروائیں جاسکیں گے۔

مسلم لیگ ن کے الیکشن کمیشن نے کہا کہ پارٹی صدر کے عہدے کے الیکشن کے لئے جمع کروائے گئے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال دوپہر 1 بجے سے 2 بجے کے درمیان ہوگی جب کہ سہہ پہر 4 بجے پارٹی کی مرکزی جنرل کونسل نئے صدر کا انتخاب کرے گی۔

ڈالر کی قیمت میں معمولی اضافہ

پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ قائد میاں محمد نواز شریف کا مسلم لیگ ن کا بلامقابلہ صدر منتخب ہونے کا امکان ہے۔دوسری جانب آج کی جنرل کونسل کے اجلاس کا ایجنڈا بھی جاری کردیا گیا ہے جس کے مطابق جنرل کونسل کے اجلاس میں پارٹی آئین میں ترامیم بھی منظور کروائی جائیں گی۔

ایجنڈہ میں کہا گیا ہے کہ اجلاس میں صدر کے عہدے کا انتخاب کیا جائے گا، کشمیر اور فلسطین سمیت مختلف معاملات پر قرادادیں منظور کی جائیں گی۔

ایجنڈہ میں مزید کہا گیا ہے کہ قائم مقام صدر شہباز شریف اجلاس سے خطاب کریں گے جب کہ نومنتخب صدر بھی اجلاس سے خطاب کریں گے۔


متعلقہ خبریں