چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے دو سرکاری قیمتی گاڑیاں واپس کر دیں

چیف جسٹس قاضی فائز

چیف جسٹس آف پاکستان  قاضی فائز عیسیٰ نے دو سرکاری قیمتی گاڑیاں واپس کر دیں۔

دونوں گاڑیاں چیف جسٹس آف پاکستان کے استعمال کے لئے مختص ہیں، سپریم کورٹ کے رجسٹرار نے سیکریٹری کابینہ اور چیف سیکریٹری پنجاب کو خط لکھا ہے جس میں کہا گیا کہ علم میں آیا ہے کہ سپریم کورٹ نے چیف جسٹس کے لیے ستمبر 2020ء میں لگژری کارمرسڈیز بینز خریدی جس کی مالیت 6 کروڑ 10 لاکھ روپے ہے۔

سب سے زیادہ ہم ججز جوابدہ ہیں، چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ

خط میں کہا گیا کہ حکومت پنجاب نے بھی چیف جسٹس کے لیے ایک بالکل نئی بلٹ پروف لینڈ کروزر گاڑی دی، رجسٹرار نے خط میں کہا کہ دونوں گاڑیاں جی او آر لاہور میں سپریم کورٹ ریسٹ ہاؤس میں کھڑی ہیں۔

رجسٹرار سپریم کورٹ نے خط میں کہا کہ قواعد کے مطابق چیف جسٹس اور ہر جج کو دو دو گاڑیاں دی گئی ہیں،مزید کہا گیا کہ چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ یہ لگژری گاڑیاں استعمال نہیں کر رہے۔

خط میں چیف جسٹس کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ آئینی عہدوں کیلئے لگژری گاڑیاں درآمد کر نامناسب نہیں، دونوں گاڑیاں نیلام کرکے رقم پبلک ٹرانسپورٹ پر خرچ کی جائے۔


متعلقہ خبریں