عدت میں نکاح، خاور مانیکا چیئرمین پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی کیخلاف عدالت پہنچ گئے

khawar manika

عمران خان میری مرضی کے بغیر گھر آتا تھا بشریٰ بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کے تہلکہ خیز انکشافات


چیئرمین پی ٹی آئی اور بشریٰ بی بی کے عدت میں نکاح میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔

بشریٰ بی بی کے سابق خاوند خاورمانیکا نے اسلام آباد سیشن کورٹ سے رجوع کر لیا، درخواست میں انہوں نے بشریٰ بی بی اور چیئرمین پی ٹی آئی کو سزادینے کی استدعا کردی۔

خاور مانیکا نے اپنی درخواست کے ساتھ چار گواہوں کی لسٹ بھی منسلک کی ہے، ان گواہوں میں خاور فرید مانیکا خود، مفتی سعید، عون چوہدری اور محمد لطیف شامل ہیں۔

درخواست میں انہوں نے موقف اختیار کیا کہ ہم 1989 سے ہنسی خوشی شادی شدہ زندگی گزار رہے تھے، ہماری زندگی میں عمران خان پیری مریدی کی آڑ میں داخل ہوا۔

انہوں نے درخواست میں موقف اختیار کیا کہ دھرنے کے دوران میری سالی مریم جو یہودی لابی سے تعلق رکھتی ہے نے عمران خان سے تعارف کرایا۔

بشریٰ بی بی کے سابق شوہرخاور مانیکا  نے اپنا بیان سول جج کی عدالت میں ریکارڈ کرایا اور درخواست میں مؤقف اختیار کیا کہ چیئرمین پی ٹی آئی نے بشریٰ بی بی سے غیرشرعی نکاح کیا، چیئرمین پی ٹی آئی نے دوران عدت نکاح کرکے گناہ کیا اور فراڈ پر مبنی شادی کی۔

خاور مانیکا نے عدالت میں اپنے بیان میں کہا کہ بشریٰ بی بی اور عمران خان کے درمیان شادی سے پہلے ہی ناجائز تعلقات تھے، تصدیق شدہ ناجائز تعلقات کی بناء پر بشریٰ بی بی کو طلاق دینے پر مجبور ہوا۔


متعلقہ خبریں