زین الانصاری کو بی جے پی اور آرایس ایس نے زندہ جلایا تھا، تیجسوی یادو


دہلی: راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے رہنما اور بہار کے سابق نائب وزیراعلیٰ تیجسوی یادو نے دعویٰ کیا ہے کہ ضعیف العمر زین انصاری کو بی جے پی اور آر ایس ایس کے لوگوں نے مارا تھا۔ انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس ثبوت ہیں کہ زین الانصاری کو مار دیا گیا اور انتظامیہ نے کچھ نہیں کیا۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق بہار کے علاقے سیتامڑھی میں گزشتہ ماہ ایک اندوہناک سانحہ پیش آیا تھا۔ جس میں ایک بزرگ زین الانصاری کو پہلے لوگوں کے ہجوم نے گھیر کر بدترین تشدد کا نشانہ بنایا، پھر ان کا گلا کاٹا اوراس کے بعد چوراہے پر زندہ جلا دیا تھا۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق زین الانصاری کے خاندان والوں کو اس اندوہناک سانحہ کی اطلاع بھی تین دن بعد ملی تھی کیونکہ اس وقت حکومت نے وہاں انٹرنیٹ سروس بند کردی تھی۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق تین دن بعد جب انٹرنیٹ سروس بحال ہوئی تو اپنی جان کی بازی ہار جانے والے بزرگ کے اہل خانہ کے علم میں آیا کہ جن کا وہ انتظار کررہے تھے وہ دنیائے فانی سے گزر چکے ہیں۔

زین الانصاری کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی۔

 


متعلقہ خبریں