بجٹ میں پیوند لگائے گئے، ٹیکس سے تنخواہ دار طبقے پر بوجھ پڑے گا، مفتاح اسماعیل

Miftah Ismail

اسلام آباد: سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ بجٹ میں صرف پیوند لگائے گئے۔ ٹیکس سے تنخواہ دار طبقے پر بوجھ پڑے گا۔

سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے آئندہ مالی سال کے بجٹ پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے وزارتیں ختم کرنے کا کہا لیکن ختم نہیں کی گئیں۔ اسٹیٹ بینک نے نوٹ چھاپے تومہنگائی بڑھے گی۔

انہوں نے کہا کہ بجٹ میں صرف پیوند لگائے گئے ہیں۔ پٹرول پر لیوی بڑھا دی گئی ہے جبکہ ٹیکس سے تنخواہ دار طبقے پر بوجھ پڑے گا۔ جو ٹیکس دے رہا ہے اسی سے ٹیکس لیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: موبائل، سیمنٹ، کاغذ، امپورٹڈ ملبوسات ،گاڑیاں مہنگی، پٹرولیم لیوی میں بھی اضافہ

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ این ایف سی سے متعلق بات نہیں کی گئی۔ سیمنٹ، ادویات اور دودھ مہنگا کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم پر 70 ہزار ارب روپے کا بیرونی قرض ہے۔ ریٹائرمنٹ کے حوالے سے بھی بات نہیں کی گئی۔ کیا ملک کو اصلاحات کی ضرورت نہیں ہے؟ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) نے اصلاحات سے منع نہیں کیا۔


متعلقہ خبریں