معاشی اعشاریے مثبت، مہنگائی کی شرح 38 سے 11 فیصد ہوگئی، وزیر خزانہ


وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے کہا ہے کہ پاکستان میں مہنگائی ہے جس سے انکار نہیں، شرح 38 سے کم ہوکر 11 فیصد تک آگئی ہے۔

چینی شہر شینزن میں پاک چین بزنس فورم سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دنیا میں ٹیکنالوجی پر انحصار کا رجحان بڑھ رہا ہے۔ ٹیکنالوجی کا استعمال ہر شعبے کے لیے مؤثر ثابت ہورہا ہے۔

محمد اورنگزیب کا کہنا تھا کہ حکومت کی توجہ اقتصادی اصلاحات پر ہے۔ حکومت پاکستان نے مہنگائی میں کمی کے لیے سنجیدہ اقدامات کیے جس کے بعد پاکستان میں مہنگائی کی شرح کم ہوکر 11 فیصد پر آگئی ہے۔

مہنگائی کی شرح گرنے کا رجحان جاری، مئی میں 3.2 فیصد کمی ریکارڈ

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی کرنسی کئی ماہ سے مستحکم ہے جبکہ معاشی اعشاریے بھی مثبت سمت کی جانب گامزن ہیں۔ پرائیویٹ سیکٹر کو آگے لانے کی ضرورت ہے، خسارہ میں چلنے والے اداروں کی نجکاری کررہے ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ہمیں رواں سال شرح سود کے معاملے کو دیکھنا ہوگا، امریکا سمیت اہم عالمی مارکیٹوں تک رسائی کے حصول کی کوشش کر رہے ہیں۔ عالمی مارکیٹ تک رسائی کے لیے پاکستان نے مصنوعات کے معیار کو مزید بہتر کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا ہے، بیرونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد ہے۔ پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تیزی دیکھی جارہی ہے۔


متعلقہ خبریں