گولڈن اقامہ رکھنے والے غیرملکیوں کو طویل المدتی قیام کی اجازت

uae

متحدہ عرب امارات کی حکومت نے گولڈن اقامہ رکھنے والے غیرملکیوں کو طویل المدتی قیام کی اجازت دیدی۔

یو اے ای حکومت نے کہا ہے کہ گولڈن اقامہ رکھنے والے غیرملکیوں کو طویل المدتی قیام کی اجازت ہے ،گولڈن اقامے کیلئے کسی اسپانسر کی بھی ضرورت نہیں، گولڈن اقامہ ہولڈرز امارات میں رہتے ہوئے ملازمت ، سرمایہ کاری اور اعلی تعلیم حاصل کر سکتے ہیں۔

تنخواہ دار افراد کیلئے انکم ٹیکس شرح میں اضافے کی بجٹ تجویز کی منظوری موخر

اماراتی حکومت کی جانب سے گولڈن اقامہ کے خصوصی فوائد بتاتے ہوئے کہا گیا کہ گولڈن اقامہ امارات میں سرمایہ کاری، تجارت، سروسز کے شعبے سے منسلک افراد کے علاوہ مختلف شعبوں میں نمایاں خدمات انجام دینے والے اور ذہین طلبا کو بھی جاری کیا جاتا ہے۔اقامے کی دو کیٹگریز ہیں۔

درخواست گزار کی قابلیت کو مدنظر رکھتے ہوئے اقامہ جاری کیا جاتا ہے۔گولڈن اقامہ کی مدت پانچ اور دس برس ہوتی ہے جس میں مزید توسیع کرائی جا سکتی ہے۔

گولڈن اقامہ ہولڈر کو یہ سہولت بھی ہے کہ وہ 6 ماہ سے زیادہ عرصے کے لیے بھی امارات سے باہر رہ سکتا ہے۔اقامہ ہولڈر کو اپنی فیملی کے لیے اقامہ جاری کرنے کا اختیار ہوتا ہے۔

سریے کی فی ٹن قیمت میں سالانہ بنیادوں پر بڑی کمی ریکارڈ

ذاتی ملازمین کے لیے بھی تعداد کی کوئی خاص حد مقرر نہیں۔سرمایہ کار کے لیے بنیادی شرط ہے کہ وہ سرمایہ کاری فنڈ کے ذریعے دوملین درھم کی سرمایہ کاری کرنے کی یقین دہانی کرائے جس کیلیے سرمایہ کاری فنڈ سے تصدیق شدہ درخواست جمع کرانا ہو گی۔


متعلقہ خبریں