اسرائیلی وزیر دفاع کے گھر سے ایرانی جاسوس گرفتار، فرد جرم عائد

اسرائیلی وزیردفاع کے گھر سے ایرانی جاسوس گرفتار، فرد جرم عائد

تل ابیب: اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینز کے گھریلو عملے میں ایک ایرانی جاسوس بھی شامل ہے۔ یہ الزام اسرائیل کی داخلی سیکیورٹی سروس شین بیت نے عائد کیا ہے۔

امریکہ: ایران کے خلاف قومی ایمرجنسی میں مزید توسیع

ہم نیوز نے مؤقر انگریزی اخبار دی اسٹریٹ ٹائمز کے حوالے سے بتایا ہے کہ اسرائیل کی داخلی سیکیورٹی سروس شین بیت نے اپنے ہی وزیر دفاع کے گھریلو ملازم پر الزام عائد کیا ہے کہ اس نے ہمارے ازلی دشمن ایران کو جاسوسی کی پیشکش کی تھی۔

اخبار کے مطابق شین بیت سیکیورٹی سروس نے اس ضمن میں کہا ہے کہ 37 سالہ مشتبہ اسرائیلی نے سوشل میڈیا پر ایک بے نام شخص سے مراسلات کا تبادلہ کیا جس میں اس نے اپنی اہمیت و شناخت ظاہر کرنے کے لیے وزیر دفاع بینی گینز کے گھر کے مختلف حصوں کی تصاویر بھی شیئر کیں۔

ایران کو ایٹمی ہتھیاروں کے قریب نیتن یاہو کی پالیسیوں نے کیا، سابق موساد چیف

شین بیت کے مطابق بینی گینز کے ذاتی ملازم نے وزیر دفاع کے کمپیوٹر پرمیلاویئرانسٹال کرنے کی بھی تجویز پیش کی تھی۔

یاد رہے کہ ایران اور اسرائیل کے درمیان کشیدگی برسوں سے قائم ہے اور خطے میں وہ ایک دوسرے کے حریف تصور کیے جاتے ہیں۔

ایران کو جوہری ہتھیار حاصل کرنے سے ہر قیمت پر روکیں گے، اسرائیلی وزیر اعظم

اسرائیل کی داخلی سیکیورٹی کی ذمہ دار شین بیت کے مطابق گینزکی رہائش گاہ میں گھریلو دیکھ بھال اورصفائی کے کام پرمامورمشتبہ شخص پرتل ابیب کے قریب واقع شہرلد کی ایک عدالت نے جاسوسی کے الزامات میں فردجرم بھی عائد کردی ہے۔ اس شخص کو ماہ رواں کی ابتدا میں مکمل تحقیقات کے بعد گرفتار کیا گیا تھا۔


متعلقہ خبریں