وزیراعظم کے پانچ مشیران میں سے کون مستعفی ہوگا؟فیصلہ نہیں ہوا

وزیراعظم عمران خان نے اپنی معاشی ٹیم کا اجلاس طلب کر لیا

اسلام آباد:  وزیراعظم عمران خان کے موجودہ پانچ مشیران میں سے کون مستعفی ہو گا؟ تاحال اس کا فیصلہ نہیں ہوا ہے لیکن بابر اعوان کو ایک مرتبہ پھر وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا اصولی فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

‘بابر اعوان نندی پور کیس میں تاخیر کے ذمہ دار نہیں‘

ہم نیوز نے انتہائی ذمہ دار ذرائع سے بتایا ہے کہ سابق مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان کو دوبارہ وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ انہیں ایک مرتبہ پھر ’پرانا قلمدان‘ ہی تفویض کیا جائے گا۔

ذرائع نے اس ضمن میں ہم نیوز کو بتایا ہے کہ موجودہ وفاقی وزیر برائے پارلیمانی امور اعظم سواتی کا قلمدان تبدیل کردیا جائے کیونکہ بابر اعوان اب مشیر پارلیمانی امور ہوں گے۔

بابر اعوان نے مشیر کے عہدے سے استعفی دے دیا

سابق مشیر اور ممتاز قانون دان بابر اعوان نندی پور کرپشن کیس مں نیب ریفرنس میں نام آنے پر وفاقی کابینہ سے مستعفی ہوگئے تھے۔

ہم نیوز کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی مرکزی حکومت نے تاحال یہ فیصلہ نہیں کیا ہے کہ وزیراعظم کے کس مشیر کو مستعفی کیا جائے گا؟ کیونکہ آئینی و قانونی اعتبار سے کابینہ میں پانچ مشیران رکھنے کی اجازت ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان خود کریں گے۔ اس وقت وزیراعظم کے پانچ مشیران ہیں جن میں ڈاکٹر حفیظ شیخ، ڈاکٹر عشرت حسین، ملک امین اسلم، عبدالرزاق داؤد اور ارباب شہزاد شامل ہیں۔


متعلقہ خبریں