رواں ماہ پاکستان سےمذاکرات شروع کریں گے، آئی ایم ایف


واشنگٹن: انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان کے ساتھ مذاکرات شروع کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

ترجمان آئی ایم ایف جیری رائس نے بتایا کہ بیل آؤٹ پیکج پرمذاکرات کے لیے آئی ایم ایف کا مشن سات نومبر کو اسلام آباد پہنچے گا۔

حکومت پاکستان نے گزشتہ ماہ انڈونیشیا میں ہونے والی ملاقات میں آئی ایم ایف کو بیل آؤٹ پیکج کے لیے درخواست دی تھی۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ رواں ماہ کی جانے والی اس بات چیت کا مقصد اسٹاف کی سطح پرایک معاہدے تک پہنچنا ہے تاہم بعد ازں اسے غور کے لیے آئی ایم ایف کے ایگزیکٹو بورڈ کو پیش کیا جائے گا البتہ انہوں نے ابھی اس حوالے سے کوئی مخصوص شیڈول پیش نہیں کیا۔

اس سے قبل حکمراں جماعت نے عوام کواس بات سے آگاہ کردیا تھا کہ سعودی عرب کی جانب سے چھ ارب ڈالر کے معاہدے کے بعد بھی پاکستان آئی ایم ایف سے بیل آؤٹ لے گا۔

چند ہفتے قبل وزارت خزانہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں بھی کہا گیا تھا کہ پاکستان آئی ایم ایف سے قرض لینے کے لیے نومبر کے پہلے ہفتے میں باقاعدہ پروگرام کا آغاز کرے گا۔


متعلقہ خبریں