بلاول بھٹو نے سندھ حکومت کی کارکردگی پر عدم اطمینان کااظہار کردیا

Bilawal Bhutto

شادی کب کر رہے ہیں؟ صحافی کے سوال پر بلاول بھٹوکا دلچسپ جواب


چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے ارکان سندھ اسمبلی کی کارکردگی پرمایوسی کااظہارکردیا۔

کراچی میں پیپلز پارٹی سندھ کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا الیکشن کوکئی ماہ گزرگئے،اپنےارکان اسمبلی میں سستی دیکھ رہا ہوں،آپ5دفعہ جیت کر آئے ہیں،ضروری ہے کہ آپ عوام کی توقعات پر پورا اتریں۔

پی ٹی آئی اور جے یو آئی پاکستان نے اتحاد کرلیا

کچھ لوگوں کی اچھی رپورٹ مل رہی ہے جبکہ کچھ کی نہیں،پارلیمان کی حاضری کیساتھ ساتھ اپنے حلقوں میں عوام کووقت دینا پڑے گا،ارکان کو کہناچاہتا ہوں کہ اپنے حلقوں پر توجہ دیں،ہم اپنے منصوبوں کےفیصلے کھلی کچہری میں مشورے لے کر کریں۔

انہوں نے مزید کہا وفاقی حکومت کی طرف سے پیسہ ملنا چاہیے،فوکس کرنا ہوگا محدود وسائل میں مسائل کیسےحل ہوں گے،امید ہے بجٹ سےپہلےمسائل حل ہوں گے،وزیراعظم شہبازشریف اپنا وعدہ پورا کریں گے۔

چاہتاہوں کہ ہمیں ٹرانسفر اور پوسٹنگ کی سیاست سے دور رہناچاہیے،ہماری خواہش ہے کہ اچھے افسر ہوں اور بہتر کارکردگی دکھائیں،سندھ میں جو بھی افسر تعینات ہوں وہ میرٹ پر ہوں،چاہتاہوں اندرونی مسائل کے باعث پارٹی اور حکومت کو نقصان نہ پہنچے۔

حج کے دنوں میں شدید گرمی ، عازمین حج کو ہدایات جاری

میں ہمیشہ ٹیم ورک کو پسند کرتا ہوں،عوام نفرت کی سیاست سے بہت مایوس ہیں،پورا ملک نفرت کی سیاست سے مایو س ہے ،ہمارا حکومت میں آنے کا مقصد غریب عوام کی خدمت کرناہے،پرامیدہوں کہ صوبے کے عوام کی توقعات پر پورا اتریں گے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے مزید کہا کہ آپس کی لڑائیوں کی وجہ سے کارکردگی کو نقصان نہیں پہنچنا چاہئے،پیپلزپارٹی کے نمائندوں کو عوام کی آواز بنناچاہیے،ان کے مسائل حل کریں،وزیراعلیٰ سندھ سے 5سالہ پلان شیئرکردیاہے،5سالہ پلان میں ہمارا پہلا منصوبہ سولر منصوبہ ہے۔

5سالہ منصوبوں پر عملدرآمد ہماری پہلی ترجیح ہے،سندھ میں سیلاب کے باعث تباہ اسکولوں کی بحالی بھی اولین ترجیح ہے،سندھ حکومت اور وفاق نے کچھ رقم رکھی ہے امید کرتےہیں وفاق سے رقم جلد ملےگی۔

متنازعہ ٹوئٹ کیس،بیرسٹر گوہر اور رؤف حسن کیخلاف تادیبی کارروائی سے روک دیا گیا

خواہش ہےوزیرداخلہ سندھ قیام امن کیلئے بہتر کردار ادا کریں گے،ضیاالحسن لنجار امن وامان سنبھال رہے ہیں، مجھے سندھ پولیس پر پورابھروسہ ہے،پہلی بار پیپلزپارٹی کو حکومت ملی تو کافی علاقے نوگوایریا بنے ہوئے تھے،پولیس اسکواڈ کے بغیر آپ کسی بھی علاقے میں نہیں جاسکتے تھے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے اپنے خطاب میں مزید کہا غریب کو مفت بجلی پہنچانا چاہ رہے ہیں ،پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ میں گرین پارک بنانا چاہ رہے ہیں،ناصر شاہ آپ کو بتائیں گے کیسے صوبے کے غریب عوام کو بجلی پہنچانا چاہ رہے ہیں۔

باقی صوبوں میں اینٹی کرپشن کو مخالفین کیخلاف استعمال کیا جاتا ہے ، ارکان اسمبلی اپنے اضلاع میں افسران پر نظر رکھیں ،اگر کوئی افسر بدنامی کا سبب بن رہا ہے تو قیادت اور سی ایم کو بتایا جائے۔

نیٹ میٹرنگ پالیسی ختم کرنے سے متعلق زیرگردش خبروں کی تردید

اینٹی کرپشن وزیر محمد بخش کو کہا ہے کہ فری ہینڈ ہے کام کرو ،تمام محکموں کے افسران کا جائزہ لیا جائے،شرجیل میمن صاحب آپ نظر نہیں آرہے ،محکمہ ٹرانسپورٹ کی کارکردگی اچھی ہے ،موجودہ اسپیکر جب وزیر ٹرانسپورٹ تھے انہوں نے بھی اچھےکام کیے تھے۔

بانی تحریک انصاف کیا کررہے ہیں کیا نہیں، ہمیں اس سے کیا ،سابق چیئرمین پی ٹی آئی کے ساتھ جو کچھ ہورہا ہے وہ مکافات عمل ہے،سابق چیئرمین پی ٹی آئی کیخلاف کیسز ہیں جس کا وہ سامنا کررہے ہیں۔

ہمیں کسی اور کے سیاسی معاملات میں مداخلت نہیں کرنی چاہیے،بلاول بھٹو نے وزیراعلیٰ سندھ سے ہر6ماہ بعد کابینہ وزرا کی رپورٹ مانگ لی۔

7 جون کو ذی الحج کا چاند نظر آنے کا قوی امکان ہے، محکمہ موسمیات

انہوں نے کہا کہ وزرا کی کارکردگی رپورٹ ملےگی تو کام کرنا آسان ہوگا،وزیراعلیٰ سندھ مانیٹر کریں کہ وزرا کس وقت دفتر آرہےہیں اور کس وقت جارہےہیں،میں ہر چھ ماہ بعد کابینہ کی کارکردگی کا جائزہ لوں گا۔

سی ایم صاحب وزیروں کے ساتھ سختی کریں،بالکل جیسے بچوں کی اسکول میں پراگریس رپورٹ دیکھی جاتی ہے۔


متعلقہ خبریں