8 لاکھ 84 ہزار روپے کا گیس بل، سپریم کورٹ نے شہری کو ریلیف دے دیا

گیس gas

سپریم کورٹ میں شہری کو ریلیف مل گیا، 8 لاکھ 84 ہزار روپے سے زائد گیس کا بل بحال کرنے کی سوئی ناردرن گیس پائپ لائن لمیٹڈ کی اپیل خارج کر دی گئی۔

جسٹس عرفان سعادت نے ریمارکس دیے کہ عام شہری کو 8 لاکھ 84 ہزار روپے کا گیس بل بھیج دیا گیا، کیا عام شہری کو اتنا بل آسکتا ہے؟چیف جسٹس قاضی فائز عیسی کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے ایس این جی پی ایل کی بل کی بحالی کے لیے اپیل کی سماعت کی۔

عیدالاضحی 17 جون کو ہونے کا قوی امکان

دوران سماعت ایس این جی پی ایل کے وکیل کی تیاری نہ ہونے پرعدالت نے برہمی کا اظہار کیا،چیف جسٹس نے ایس این جی پی ایل کے وکیل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وکیل صاحب کیس دائر کرنے کی کوئی وجوہات نہیں لکھی گئیں، کیس سپریم کورٹ آنے کی وجہ لکھنا ہوتا ہے۔

اس موقع پر جسٹس عرفان سعادت نے ریمارکس دیے کہ ایک عام شہری کو 84 ہزار کا گیس بل بھیج دیا گیا، کیا عام شہری کا اتنا بل آسکتا ہے، اتنی گیس تو کوئی کمپنی بھی استعمال نہیں کرتی ہوگی۔

بیٹریوں کی قیمت میں پچاس فیصدتک کمی ہونے کا امکان

جسٹس عرفان سعادت نے مزید کہا کہ اس شہری کا گیس کا بل کبھی 500 روپے سے زائد نہیں آتا تھا، سپریم کورٹ نے ایس این جی پی ایل کے ہائیکورٹ فیصلے کے خلاف اپیل خارج کردی۔


متعلقہ خبریں