طاقتور ترین شمسی طوفان زمین سے ٹکرا گیا

sun

دو دہائیوں بعد سب سے طاقتور شمسی طوفان زمین کی فضا سے ٹکرا گیا جس کے باعث بجلی کے گرڈز اور سیٹلائٹ مواصلات میں خلل پیدا ہوا، دنیا کے کچھ حصوں میں ٹکرائو کے سبب نکلنے والی روشنی کے مناظر بھی دیکھے گئے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی نیشنل اوشینک اینڈ ایٹموسفیرک ایڈمنسٹریشن(NOAA) نے کہا ہے کہ سورج سے تیز نکلنے والے مادے زمین کی فضا سے ٹکرائے ہیں جس کے اثرات رواں ہفتے کے اختتام تک جاری رہیں گے۔

آئی کیوب قمر کی کامیابی، پاکستان کا ایک اور سیٹلائٹ لانچ کرنے کا فیصلہ

رپوٹ کے مطابق شمسی طوفان سے اخراج کرنے والے ارضیاتی مقناطیسی طوفان جی فائیو لیول تک بڑھ چکا ہے، جس کی وجہ سے یہ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ اس سے جی پی ایس، اسپیس کرافٹ، سیٹیلائٹ و دیگر ٹیکنالوجیز متاثر ہو سکتیں ہیں۔

گزشتہ دو دہائیوں کے بعد سب سے طاقتور شمسی طوفان جمعہ کے روز زمین سے ٹکرایا جس کے بعد تسمانیہ سے برطانیہ تک آسمان پر روشنیوں کو دیکھا گیا ۔ برطانیہ کے مختلف علاقوں میں آسمان پر سبز اور جامنی رنگ نمایاں دیکھا گیا۔

NOAA کے مطابق آنے والے دنوں میں اور ممکنہ طور پر اگلے ہفتے میں مزید شمسی اخراج متوقع ہیں۔امریکی ادارے نے مدار میں موجود پاور پلانٹس اور خلائی جہازوں کے آپریٹرز کو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کا کہا ہے۔

پاکستان میں سائبر حملوں میں تین سو فیصد اضافہ

واضح رہے کہ اس سے قبل2003 میں شمسی طوفان کے باعث سویڈن میں بلیک آؤٹ ہوا تھا جبکہ جنوبی افریقہ میں بجلی فراہمی کے بنیادی ڈھانچے شدید متاثر ہوئے تھے۔


متعلقہ خبریں