بھارتی ریاست اڑیسا میں ’تتلی‘ سے ہلاکتوں کی تعداد 57 ہوگئی


نئی دہلی: انڈیا کی ریاست اڑیسا میں آنے والے تتلی طوفان  کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد 57 ہو گئی۔

مقامی حکومت کے ترجمان کے مطابق طوفان سے بہت زیادہ تباہی ہوئی اورایک اندازے کے مطابق ریاست میں تقریبا 30 کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔

گزشتہ ہفتے طوفان تتلی اڑیسا اور پڑوسی ریاست اندرا پردیش سے 140 سے 150 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے  ٹکرایا تھا۔ طوفان سے دونوں ریاستوں میں وسیع پیمانے پر تباہی ہوئی۔ طوفان نے درختوں اور بجلی کے کھمبوں کو جڑ سے اکھاڑ پھینکا تھا۔

حکومتی ترجمان نے کہا کہ ریاست کے وزیر اعلی نے ہلاک ہونے والوں کے لواحقین کے لیے اعلان کی گئی امداد کو5436 ڈالر سے بڑھا کر 13588 ڈالر کر دیا ہے۔

حکومتی اہلکاروں کا کہنا ہے طوفان تتلی سے ریاست کے 16 اضلاع بشمول گجاپتی، کنڈھامل، کوٹک، انگول، کیونجھر اور نیا گڑھ متاثرہوئے۔ ان کا کہنا تھا 57 ہلاکتوں میں سے 39 گجاپتی ضلع میں رپورٹ ہوئے۔

سنئیر حکومتی اہلکاراے پی پڈھی کے مطابق بحالی کا کام تیزی سے جاری ہے۔ تمام شاہراہوں کی مرمت کی جا چکی ہیں اور شہری علاقوں میں پینے کے پانی اور بجلی کی سپلائی لائنیں بحال کی جاچکی ہیں جبکہ دیہی علاقوں میں ابھی تک بحالی کا کام جاری ہے۔

پڈھی کا کہنا ہے کہ میڈیکل ٹیمیں متاثرہ علاقوں کا دورہ کر رہی ہیں۔


متعلقہ خبریں