ضمنی انتخاب میں غیر متوقع نتیجہ آئے گا، سعد رفیق


لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ اس دفعہ پہلے سے بہت بہتر توقعات ہیں، اس بار حالات بہت مختلف ہیں، غیر متوقع نتیجہ آئے گا۔

ہم نیوز کے پروگرام ’ندیم ملک لائیو‘ میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے تھوڑے عرصے میں بہت مہنگائی کی ہے، اس کا ردعمل انتخاب میں سامنے آئے گا۔

ایک سوال کے جواب میں سعد رفیق کا کہنا تھا کہ تمام سیاسی جماعتوں کو یہ تسلیم کرنا ہو گا کہ ملک میں جمہوریت نہیں ہے، ضمنی انتخاب سر پر ہیں، میں تلخیاں بڑھانا نہیں چاہتا لیکن کسی کو تو سچ بولنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ میں عمران خان سے الجھنا نہیں چاہتا، اسمبلی میں جانے کا موقع ملا تو مثبت اپوزیشن کروں گا، حکومت کو تنگ کرنے، گریبان پھاڑنے نہیں، حکومت کی سمت درست کرنے جا رہا ہوں۔

اپوزیشن کے درمیان تلخیوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ اگلے چند ماہ میں اپوزیشن کی یہ تقسیم ختم ہو جائے گی، اسلام آباد میں ہم اکھٹے ہیں، اس حلقے میں بھی جلد ہو جائیں گے۔

سعد رفیق نے کہا کہ ہمایوں اختر اس سے پہلے بھی مجھ سے ہارے تھے، اس بار بھی ہاریں گے۔ اس ضمنی انتخاب میں آپ بالکل الگ نتیجہ دیکھیں گے، کئی لوگ مجھے مل رہے ہیں اور کہہ رہے ہیں کہ پہلے ہم نے پی ٹی آئی کو ووٹ دیا اس بار آپ کو جیتنے میں مدد کریں گے۔

اسی پروگرام میں بات کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ہمایوں اختر کا کہنا تھا کہ میں نے تیس سال قبل اس حلقے سے اعتزاز احسن صاحب کو اس وقت ہرایا تھا جب لاہور پیپلزپارٹی کا  گڑھ تھا، اس بار بھی سعد رفیق کو بڑے فرق سے ہرائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ ن لاہور میں اور اس حلقے میں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے، ضمنی انتخاب میں ہمارا جیت کا فرق 15 سے 20 ہزار کے درمیان ہو گا۔

انہوں نے دعوی کیا کہ سعد رفیق ‘دھاندلی ماسٹر’ ہیں، انہوں نے 2014 میں بھی اور پھر 2018 میں بھی عمران خان کے خلاف دھاندلی کی تھی، میں پوری کوشش کر رہا ہوں کہ اس الیکشن میں یہ ایسی کوئی حرکت نہ کریں۔

ہمایوں اختر کا کہنا تھا کہ اگر سعد رفیق نے ایسی کوئی کوشش کی تو رنگے ہاتھوں پکڑے جائیں گے۔

تحریک انصاف کے رہنما کا کہنا تھا کہ سعد رفیق انتخابات میں اچھی مہم چلاتے ہیں، لیکن مجھے ان کے دھاندلی کے طریقوں پر اعتراض ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حلقے میں جس گلی سے گزرتا ہوں لوگ یاد دلاتے ہیں کہ گلی، ٹیوب ویل، سڑک آپ نے بنائی تھی۔ لوگوں کو میرا کام  اور سعد رفیق صاحب کی نا اہلی یاد ہے۔

 

 


متعلقہ خبریں