جرمنی نے 52 ممالک کا15.8ارب یورو مالیت کا قرض معاف کر دیا

جرمنی germany

جرمنی کی وزارت خزانہ کے مطابق رواں صدی کے آغاز سے اب تک حکومت کی طرف سے مجموعی طور پر 52 ممالک پر واجب الادا 15.8 ارب یورو مالیت کا قرض معاف کر دیا گیا۔

جرمن وزارت خزانہ کے مطابق حکومت نے قرضوں میں ریلیف کا انتظام یقینی بنانے کے لیے 52 ممالک کے ساتھ معاہدے کیے ہیں۔معاف کردہ قرضوں میں سب سے زیادہ حصہ عراق کا ہے۔

جرمنی نے عراق کے ذمہ واجب الادا 4.7ارب ڈالر مالیت کا قرضہ معاف کیا، عراق کے بعد نائیجیریا کا دوسرا نمبر ہے، جسے 2.4ارب ڈالر مالیت کا قرض معاف کیا گیا جب کہ کیمرون کے ذمے 1.4ارب ڈالر کا قرض بھی معاف کر دیا گیا۔

پاکستان میں الیکٹرک گاڑیوں کی فروخت، چینی آٹو کمپنی اورحب پاور کے درمیان معاہدہ طے

جرمن وزارت خزانہ کے مطابق گزشتہ برس کے اختتام تک 70سے زائد ممالک نے جرمنی کو 12.2 بلین ڈالر کے قرضے واپس کرنا تھے۔ اس وقت سب سے زیادہ واجبات مصر (1.5بلین ڈالر)، بھارت (1.1بلین ڈالر) اور زمبابوے (889ملین ڈالر) نے ادا کرنا ہیں۔

جرمن حکام کے مطابق قرضوں میں ریلیف ‘میکرو اکنامک استحکام حاصل کرنے یا برقرار رکھنے اور مقروض ممالک کے لیے قرضوں کی پائیداری کو بحال کرنے کے لیے دی جاتی ہے۔

معاف کردہ قرضوں میں ریاستوں کے ساتھ مالی تعاون کے واجب الادا فنڈز کے ساتھ ساتھ جرمن ایکسپورٹرز اور بینکوں کے سپلائی اور کریڈٹ معاہدوں سے حاصل ہونے والی تجارتی وصولیاں بھی شامل ہیں۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں