موٹرسائیکل والوں کیلئے پٹرول پر سبسڈی، وزیر پیٹرولیم سے بریفنگ طلب

پیٹرولیم ڈیلرز

فائل فوٹو


سینیٹ فنانس کمیٹی کے اجلاس میں پیٹرولیم ڈویلپمنٹ لیوی 60 سے 80 روپے فی لیٹر کرنے پر دوسرے دن بھی بحث جاری رہی۔

چیئرمین سینٹ فنانس کمیٹی نے کہا موٹر سائیکل والوں کے لیے پیٹرول کا مختلف ریٹ ہونا چاہئے،گاڑیاں چلانے والے مہنگا پیٹرول برداشت کر سکتے ہیں۔

وفاقی وزارتوں اور محکموں میں 3 ہزار سے زائد خالی اسامیوں پر بھرتی کی منظوری

وزارت پیٹرولیم کے حکام نے کہا پیٹرول کی 50 فیصد کھپت موٹر سائیکل میں استعمال ہوتی ہے، گاڑیوں اور موٹر سائیکل کو مختلف ریٹ پر پیٹرول دینا ممکن نہیں ،ایک سال پہلے موٹرسائیکل والوں کو سبسڈی دینے پر کام ہوا تھا مگر پیش رفت نہ ہو سکی۔

اس موقع پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ انڈونیشیا کی حکومت موٹرسائیکل والوں کو کم ریٹ پر پیٹرول مہیا کر رہی ہے،انڈونیشیا کی حکومت موٹرسائیکل والوں کو کم ریٹ پر پیٹرول دے سکتی ہے تو پاکستان کیوں نہیں؟

ملک میں 18 جون سے بارشوں کی پیشگوئی

حکام وزارت پیٹرولیم نے اجلاس میں بتایا ہائی اوکٹین پر پی ڈی ایل 60 سے 75 روپے تجویز کی ہے،سینیٹرمحسن عزیز نے کہا ہائی اوکٹین ڈلوانے والے مہنگا پیٹرول برداشت کر سکتے ہیں،ہائی اوکٹین پر پی ڈی ایل 100 روپے ہونا چا ہئے۔

کمیٹی نے ہائی اوکٹین پر پیٹرولیم لیوی 100 روپے کرنے کی سفارش کر دی،موٹرسائیکل والوں کو سبسڈی دینے کے معاملہ پر وزیر پیٹرولیم سے کل بریفنگ طلب کرلی گئی۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں