شاعر احمد فرہاد کو ضمانت پر رہا کردیا گیا

شاعر احمد فرہاد ahmed farhad

شاعر احمد فرہاد کوآزاد جموں کشمیر ہائی کورٹ کے حکم پر ضمانت پر رہا کردیا گیا۔

احمد فرہاد خاندان اور دوستوں کےہمراہ آزاد کشمیر کی حدود سے روانہ ہوگئے، قبل ازیں ہائیکورٹ نے شاعر احمد فرہاد کی ضمانت 2لاکھ روپے مچلکوں کے عوض منظور کرتے ہوئے رہائی کا حکم دے تھا۔

احمد فرہاد کے وکیل نے آزاد کشمیر ہائیکورٹ میں دلائل دیے، چیف جسٹس مظفر آباد ہائیکورٹ صداقت حسین نے ریمارکس دیے کہ عدالتی نظام کی خرابی کی وجہ سے احمد فرہاد کو سزا بھگتنا پڑی۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ جج بھی سیاستدانوں کی طرح میڈیا کو دیکھتے ہیں کہ آج میری خبر چلی ہے کہ نہیں، پھر تاثر دیا جاتا ہے کہ آزاد کشمیر کا عدالتی نظام مضحکہ خیز ہے۔

زندہ رہا تو 10 دن میں فیصلہ کرونگا، دورانِ عدت نکاح کیس میں جج کے ریمارکس

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر چھوٹی ریاست ہے اور ہمارا اپنا عدالتی نظام ہے، چیف جسٹس مظفر آباد ہائیکورٹ نے ریمارکس دیے کہ احمد فرہادصرف شاعری کرے،صحافت نہ کرے۔

احمد فرہاد کو آج جیل سے رہا کیے جانے کا امکان ہے، واضح رہے کہ 10 جون کو آزاد کشمیر کے دارالحکومت مظفرآباد کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے شاعر احمد فرہاد کو جوڈیشل ریمانڈ پر 24 جون تک راڑہ جیل منتقل کرنے کا حکم دیا تھا۔


متعلقہ خبریں