غیر قانونی اقدامات روکیں گے تو ڈالر خود نیچے آئے گا، نگران وزیر اعظم

anwar ul haq kakar

نئے ویزا نظام کا افتتاح کر دیا گیا


اسلام آباد: نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے کہا ہے کہ ڈالرز کی اسمگلنگ کے حوالے سے غیر قانونی اقدامات روکیں گے تو ڈالر خود نیچے آئے گا۔

نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قانون سازی کا اختیار پارلیمنٹ کو ہے اور صدر مملکت نے خط میں تجویز دی ہے وہی جواب دے سکتے ہیں۔ صدر نے خط کے ذریعے تجویز دی ہے کہ کوئی فیصلہ نہیں دیا اور صدر عارف علوی آئینی طور پر ملک کے سربراہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نگران حکومت غیر جانبدار ہوتی ہے اور انتخابات کرانا الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے۔ ہم ایک دن رہیں یا ایک مہینہ، قانون کے مطابق رہیں گے۔ انتخابات کے شیڈول کا فیصلہ الیکشن کمیشن نے کرنا ہے۔

انوار الحق کاکڑ نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم نواز شریف کسی ڈیل کے تحت واپس آ رہے ہیں اور سیاسی جماعتوں پر پابندی کی سمری کابینہ میں آئی تو میرٹ پر غوروخوض کیا جائے گا۔ چیئرمین پی ٹی آئی کو بھی جیل میں سابق وزیراعظم کی سہولتیں ملنی چاہئیں۔

انہوں نے کہا کہ عام حالات میں سویلین کا فوجی عدالتوں میں ٹرائل نہیں ہونا چاہیے اور پارلیمنٹ سے جو قانون پاس ہوئے ان پر عمل کر رہے ہیں۔ میرے خیال میں انتخابات مناسب وقت پر ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیں: تحریک انصاف لاہور میں 10 سے زیادہ سیٹیں جیت سکتی ہے،عمران شفقت

نگران وزیر اعظم نے کہا کہ ملک کے ایک ایک انچ کی حفاظت ہماری ذمہ داری ہے اور 9 مئی کو چند مخصوص شرپسند عناصر نے ملٹری اہداف کو نشانہ بنانے کی کوشش کی۔ بجلی اور گیس چوری میں ملوث افراد کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں جبکہ ڈالرز کی اسمگلنگ کے حوالے سے غیر قانونی اقدامات روکیں گے تو ڈالر خود نیچے آئے گا۔

انہوں ںے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے دیرینہ اور مضبوط برادرانہ تعلقات ہیں اور اگر سعودی عرب اپنے مفادات دیکھتا ہے تو ہمیں کیا اعتراض ہے۔ معیشت اور دہشتگردی پاکستان کے بڑے چیلنجز ہیں۔ مختلف اداروں کی نجکاری سے متعلق فیصلے گزشتہ حکومت کر چکی ہے اور فواد حسن فواد کی سربراہی میں نجکاری کے حوالے سے کمیٹی بنا دی ہے۔


متعلقہ خبریں