فنڈز کی عدم ادائیگی، نجی کمپنی کی بی آر ٹی سروس بند کرنے کی دھمکی

brt

پشاور بس ریپڈ ٹرانزٹ کی نجی کمپنی نے بقایاجات کی عدم ادائیگی پر ایک بار پھر محکمہ مواصلات خیبر پختونخوا کو خط لکھ دیا۔

تمام تر دعوؤں کے باوجود بی آر ٹی بسیں چلانے والی کمپنی کو ادائیگی نہ ہوسکی، فنڈز کی عدم ادائیگی پر بی آر ٹی سروس کو بند کرنے کیلئے نجی کمپنی نے ایک بار سیکرٹری ٹرانسپورٹ کو خط لکھ دیا۔

سیکرٹری ٹرانسپورٹ کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ 603 ملین روپے جاری کرنے کا کہا گیا لیکن اب تک واجبات کی ادائیگی نہیں کی جاسکی، جون کا مہینہ بھی گزر گیا مگر محکمہ ٹرانسپورٹ نے اب تک مئی اور جون کی ادائیگی نہیں کی۔

پرویز خٹک اور ساتھیوں نے بی آر ٹی منصوبے میں 7 ارب روپے ہڑپ کر لیے، شاہد خٹک

خط میں کہا گیا ہے کہ ہر ماہ فنڈز کا تاخیر سے جاری کرنا کنٹریکٹ کی خلاف ورزی ہے، ملازمین کو تنخواہیں دینے کیلئے پیسے نہیں، بی آر ٹی روٹ بسوں میں ڈیزل ڈالنے کے لیے فنڈ تک موجود نہیں ہیں۔

خط میں خبردار کرتے ہوئے کہا گیاکہ 10 دنوں کے اندر اندر فنڈز جاری کیے جائیں، بقاجات نہ ملے تو بی آر ٹی سروسز بند کی جائے گی۔


متعلقہ خبریں