سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل کیخلاف کیس سماعت کیلئے مقرر

مخصوص نشستیں

سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر بل کے خلاف کیس سماعت کے لیے مقرر کردیا گیا۔

چیف جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 8 رکنی بینچ 2 مئی کو سماعت کرے گا۔ اس حوالے سے اٹارنی جنرل، سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن اور پاکستان بار کونسل کو نوٹسز جاری کردیے گئے۔

پاکستان مسلم لیگ ن، پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف سمیت 9 سیاسی جماعتوں کو بھی نوٹس جاری کیا گیا۔ گزشتہ سماعت پر سپریم کورٹ نے عدالتی اصلاحات بل پر عملدرآمد روک دیا تھا۔

سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ 2023 کو چیلنج کر دیا گیا

اس سے قبل مقامی وکیل نے سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں درخواست دائر کرتے ہوئے سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ 2023 کو چیلنج کیا تھا۔

وکیل نے اپنی درخواست میں موقف اختیار کیا تھا کہ سپریم کورٹ میں بینچز کی تشکیل چیف جسٹس کا انتظامی اختیار ہے۔ از خود نوٹسز میں اپیل کا حق آئین میں ترمیم کے بغیر ممکن نہیں ہے۔


متعلقہ خبریں