پاک آسٹریلیا ٹیسٹ ٹرافی کا نام بینو قادر کیوں رکھا گیا؟


 پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان  بینو قادر ٹرافی کا آغاز کل سے ہوگا۔ٹرافی کولیجنڈ کرکٹرز کے نام سے منسوب کیا گیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ اور کرکٹ آسٹریلیا کی جانب سے متعارف کرائی گئی ٹرافی کو دونوں ملکوں کے لیجنڈ لیگ اسپنرز عبدالقادر اور رچی بینو سے منسوب کیا گیا ہے۔

ٹرافی کو ان کے نام سےمنسوب کرنے کا مقصد  دونوں لیجنڈ پلیئرز  کو خراج  تحسین پیش کرنا اور آسٹریلیا کے 24 سال بعد تاریخی دورہ کو خصوصی اہمیت دیناہے۔

یہ بھی پڑھیں:پاکستان آسٹریلیا سیریز کیلئے کمنٹری پینل کا اعلان

یاد رہے کہ 1959 میں آسٹریلیا نے پاکستان کا پہلا دورہ کیا تھا  اس دورے میں رچی بینو نے آسٹریلین ٹیم کی قیادت کی تھی۔

دوسری جانب ٹرافی کو  لیگ اسپنر عبدالقادر سے منسوب کرنے کی وجہ ان کی آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ وکٹیں ہیں ۔عبدالقادر نے آسٹریلیا کے خلاف 11 ٹیسٹ میچز میں 45 وکٹیں حاصل کیں تھیں۔

 


متعلقہ خبریں