فاروق ستار اور عامر خان کی مشترکہ پریس کانفرنس نے ہلچل مچا دی


کراچی: متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے بہادرآباد اور لیاقت آباد گروپ نے مشترکہ پریس کانفرنس کرکے شہر کی سیاست میں نئی ہلچل مچا دی ہے۔

لیاقت آباد کے ٹنکی گراونڈ میں فاروق ستاراورعامر خان  سمیت ایم کیوایم پاکستان کے دیگر رہنماوں نے مشترکہ پریس کانفرس کی جس میں پانچ مئی کو شام پانچ بجے جلسہ کرنے کا اعلان کیا گیا.

ایم کیوایم پاکستان کے رہنما عامرخان نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ جو لوگ سمجھ رہے تھے ہم تقسیم ہو گئے وہ آنکھیں کھول کردیکھ  لیں ہم متحد تھے، ہیں اور رہیں گے۔

فاروق ستارنے کہا کہ گذشتہ روزایک بہت بڑی پیش رفت ہوئی ہے، جس کے بعد مہاجروں‌ کی یکجہتی کے لیے ساتھ نکلے ہیں۔  یہ جلسہ مہاجروں کی عزت، یکجہتی اوراتحاد قائم کرنے میں مدد دے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی دس سال سے کسی مداخلت کے بغیر سندھ پرحکومت کررہی ہے لیکن اس بارانتخابات میں ہم بڑے سرپرائز دیں گے۔

عامرخان نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ پی پی کو یہ نہیں‌ بھولنا چاہیے کہ اسی لیاقت آباد کےعوام نے جوتوں کے ہارتیار کیے تھے۔

انہوں نے کہا کہ 2018 کا الیکشن ثابت کرے گا کہ عوام ایم کیوایم کے ساتھ ہیں ، ہم ایم کیوایم کوایک بار پھر1986 والی جماعت بنائیں گے۔

ایم کیوایم پاکستان چھ فروری کو پھوٹ پڑنے کے سبب دو دھڑوں پی آئی بی کالونی اور بہادرآباد گروپ میں تقسیم ہوگئی تھی۔

بہادر آباد گروپ کی قیادت عامرخان جبکہ پی آئی بی گروپ کی قیات فاروق ستار کر رہے تھے۔

فاروق ستار سینیٹ انتخابات میں کامران ٹیسوری کو ٹکٹ دینا چاہتے تھے جبکہ عامرخان گروپ نے اس کی مخالفت کی تھی۔


متعلقہ خبریں