ویکسین کی تیز ترسیل: دبئی ویکسین لاجسٹکس الائنس قائم کردیا گیا

ویکسین کی تیز ترسیل: دبئی ویکسین لاجسٹکس الائنس قائم کردیا گیا

دبئی: عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے تیار کردہ ویکسین کی دنیا بھر میں تیز ترین ترسیل یقینی بنانے کے لیے دبئی ویکسین لاجسٹکس الائنس قائم کردیا گیا ہے۔

پاکستان کو کورونا ویکسین آسٹرازنیکا کی ایک کروڑ70 لاکھ خوراکیں ملیں گی

خلیج کے مؤقر انگریزی اخبار کے مطابق دبئی ویکسین لاجسٹکس الائنس کورونا سے زیادہ متاثرہ ممالک کے لیے کام کرے گا۔

عرب نیوز سے بات کرتے ہوئے اس حوالے سے دبئی ایئرپورٹ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر پال گریفتھس نے کہا ہے کہ دبئی اپنے مرکزی مقام کی وجہ سے ایک مثالی حیثیت رکھتا ہے۔

پال گریفتھس نے کہا کہ دبئی سے صرف چار گھنٹے کے اندر دنیا کی 80 فیصد آبادی تک رسائی ممکن ہے اور یہی وجہ ہے کہ یہاں الائنس کے قیام کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کورونا: ویکسین کی برآمد پر پابندی، ڈبلیو ایچ او کی یورپی یونین پر تنقید

اخبار کے مطابق عالمی ادارہ صحت امسال کورونا ویکسین کی دو لاکھ خوراکیں مساوی طور پر تقسیم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے اور اسی کی تقسیم کو یقینی بنانے کے لیے یہ اتحاد قائم کیا گیا ہے۔

قائم کردہ الائنس امارات ائیر لائنز، ڈی پی ورلڈ اور دبئی ایئرپورٹ سمیت دبئی میں قائم دیگر کمپنیوں کی صلاحیتوں سے استفادہ کرے گا۔

فخر ہے، چین پاکستان کو ویکسین فراہم کرنیوالا پہلا ملک ہے: چینی سفیر

اخبار کے مطابق دبئی سول ایوی ایشن اتھارٹی کے صدر، دبئی ایئرپورٹ کے چیئرمین اور امارات کے چیئرمین و سی ای او شیخ احمد بن سعید المکتوم نے اس ضمن میں وضاحت کی ہے کہ ویکسین کی تقسیم کے لیے ان علاقوں پر زیادہ توجہ دی جائے گی جہاں وبائی مرض زیادہ شدت اختیار کرچکا ہے اوروہاں کے لوگوں تک ویکسین پہنچانے میں کمپنیاں مشکلات محسوس کرر ہی ہیں۔


متعلقہ خبریں