لیاقت قائم خانی قبضہ کرنے کے بھی ماہر نکلے


کراچی: سابق ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) پارکس قبضہ کرنے کے بھی ماہر نکلے اور سڑک کو بھی اپنی جاگیر بنا لیا۔

ذرائع کے مطابق لیاقت قائم خانی نے 20 فٹ چوڑی سڑک پر سرونٹ کوارٹر ، دو ہیوی  جنریٹر، گاڑیوں کی پارکنگ اور واشننگ کا جدید نظام نصب کررکھا ہے، گھر کے عقبی راستے کی سڑک کو ایک طرف سے بند کرکے بھی اپنے قبضے میں لے رکھا ہے۔

سابق ڈی جی پارکس سڑک پر ملازمین کی چارپائیاں، واش روم اور پنکھے اور تمام سی سی ٹی وی کیمروں کا نظام بھی نصب کیا گیا ہے۔

سپریم کورٹ کے حکم کے باوجود کراچی میونسپل کمیٹی (کے ایم سی) اور سندھ حکومت نے لیاقت قائم خانی کے زیر قبضہ شاہراہ عام سے قبضہ ختم نہیں کرایا۔

یاد رہے کہ چند روز قبل قومی احتساب بیورو(نیب )کراچی نے بلدیہ عظمی کراچی کے دفتر پر چھاپہ مار کر مشیر باغات کراچی میٹرو پولیٹن اتھارٹی (کے ایم سی )لیاقت قائم خانی کو حراست میں لے لیا تھا۔

نیب نے فریئر ہال میں کے ایم سی کے دفتر پر چھاپہ مارا۔ نیب اہلکاروں نے بلدیہ عظمی کراچی کے مشیر باغات لیاقت قائم خانی کو حراست میں لے لیا۔ انہیں میئر کراچی وسیم اختر نے مشیر باغات تعینات کیا تھا۔

لیاقت قائم خانی کو ریٹائرمنٹ کے بعد کے ایم سی میں بطور مشیر رکھا گیا ہے۔

نیب ذرائع کے مطابق لیاقت قائم خانی پر باغ ابن قاسم کی تزئین و آرائش کے نام پر کروڑوں روپے کی غبن کا الزام ہے۔


متعلقہ خبریں