طورخم 24/7 منصوبے کا آزمائشی بنیادوں پر آغاز

طالبان نے طورخم بارڈر کا کنٹرول سنبھال لیا

فوٹو: فائل


پشاور: پاک افغان سرحد طورخم 24/7 منصوبے کا آج سے آزمائشی بنیادوں پر آغاز ہورہا ہے۔

سیکیورٹی ذرائع کے مطابق منصوبہ وزیراعظم کی ہدایات پر شروع کیا گیا جس کے تحت طورخم گزرگاہ آج سے دن رات کھلی رہے گی۔

منصوبے کا باقاعدہ افتتاح وزیر اعظم عمران خان کریں گے تاہم کسٹم سمیت دیگر سرکاری عملے نے دو شفٹوں میں کام شروع کردیا ہے۔

ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ سرحدی گزرگاہ  24 گھنٹے کھلی رہنے سے دو طرفہ تجارت کو فروغ ملے گا۔

اپریل میں عمران خان نے وفاقی اور صوبائی حکومت کو طورخم سرحد 24 گھنٹے کیلئے کھولنے کی ہدایت کی تھی۔

جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا تھا کہ سرحد کے 24 گھنٹے کھلے رہنے سے علاقے میں کاروباری سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا کیونکہ اس کی بندش سے کاروبار متاثر ہوا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ علاقے میں پانی کے مسئلے کے حل کے لیے جبہ اور بارا ڈیم بنائیں گے جس سے کاشتکاری بڑھے گی اور لوگوں کا پانی کا مسئلہ حل ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ واٹرسپلائی،بارہ بائی پاس بھی بنائیں گے۔ ان چیزوں کا اعلان کررہاہوں جو کرسکتا ہوں، بجلی اور گیس کی فراہمی کی پوری کوشش کروں گا لیکن وعدہ نہیں کرتا۔  اگلے دس سال تک قبائلی عوام پر100ارب روپے خرچ کریں گے۔

خیال رہے کہ گزشتہ سال اکتوبر میں پاک افغان کشیدہ تعلقات کے بعد طورخم سرحد کو بند کردیا گیا تھا تاہم دو روز بعد اسے کھول دیا گیا۔

 

 


متعلقہ خبریں