افغانستان میں مزید دو صحافی قتل

فائل فوٹو۔–


کابل: افغانستان میں مزید دو صحافیوں کو قتل کردیا گیا۔

افغان ذرائع کے مطابق دونوں صحافیوں کو افغانستان کے شمالی صوبے  تخار میں ان کے دفتر کے اندر نشانہ بنایا گیا۔ نامعلوم مسلح افراد نے صحافی رحیم اللہ رحمانی اور شفیق آریا کو فائرنگ کرکے ہلاک کیا اور فرار ہوگئے۔

افغان ذرائع نے مزید بتایا کہ واقعہ گزشتہ شب پیش آیا۔ دونوں افراد ریڈیو اسٹوڈیو کے ملازم تھے۔ ابھی تک حملے کی ذمےداری کسی نے قبول نہیں کی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ معاملے کی تحقیقات جاری ہیں تاہم ابھی حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جاسکتا۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ دونوں افراد موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے تھے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دونو ں صحافیوں کو دفتر کے اندر شو کے دوران مارا گیا۔

واضح رہے 2019 کے پہلے پانچ ہفتوں میں اب تک افغانستان میں تین صحافیوں کو قتل کیا جاچکا ہے۔ رواں برس ہی پانچ جنوری کو بھی ایک صحافی جاوید نوری کو قتل کردیا گیا تھا۔ یہ واقعہ افغان صوبے فراح میں پیش آیا تھا تاہم اس کی ذمےداری شدت پسندوں نے قبول کرلی تھی۔

شدت پسندوں کی جانب سے کہا گیا تھا کہ نوری حکومت کے لیے کام کرتا تھا اسی لیے اسے قتل کیا گیا تاہم حالیہ واقعہ میں ابھی تک کسی نے ذمےداری قبول نہیں کی۔


متعلقہ خبریں