عمران خان کی حکومت کیخلاف تحریک عدم اعتماد جنرل باجوہ کےکہنے پرلائی گئی، مولانا فضل الرحمان


امیر جے یو آئی (ف) مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ عمران خان کی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد سابق آرمی چیف جنرل ریٹائرڈ باجوہ کےکہنے پر لائی گئی۔

اداروں کے ساتھ کوئی غلط فہمی نہیں چاہتے، تمام اراکین اسمبلی سے رابطے میں ہیں،علی امین گنڈا پور

نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ پی ٹی آئی کیخلاف عدم اعتماد کے حق میں نہیں تھے۔پی ٹی آئی کیخلاف عدم اعتماد کی تحریک پیپلزپارٹی چلا رہی تھی،کل بھی کہاتھاکہ پی ٹی آئی سے صرف ذہنیت کا جھگڑا ہے وجود کا نہیں۔

پی سی بی نے کرکٹر حارث رؤف کا سینٹرل کنٹریکٹ ختم کردیا

علاوہ ازیں پی ٹی آئی کے وفد نے مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی ، ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حافظ حمد اللہ نے کہا کہ آج پی ٹی آئی کا وفد ملاقات کے لیے تشریف لایا،پی ٹی آئی وفد نے مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی۔

پی ٹی آئی نے ملاقات سے پہلے باقاعدہ آگاہ کیا،مولانا فضل الرحمان نے پی ٹی آئی وفد کو خوش آمدید کہا،8فروری کے بعد ایک سیاسی منظرنامہ نظر آرہا ہے،جے یو آئی ف نے انتخابات کے نتائج کو مسترد کیا۔

پی ایس 18 اور پی کے 90 سے آزاد امیدوار کامیاب

پی ٹی آئی اور جے یو آئی ف اس بات پر متفق ہیں کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے،پی ٹی آئی وفد جب آیا تو انہوں نے بھی یہی مدعا رکھا کہ الیکشن صاف شفاف نہیں ہے،پی ٹی آئی نے بھی کہا ہے کہ الیکشن شفاف نہیں ہوئے۔

اس موقع پر پی ٹی آئی کے رہنما بیرسٹر سیف کا کہنا تھا کہ ہم آج مولانا فضل الرحمان کے پاس ملاقات کیلئے آئے ،اسد قیصر کی سربراہی میں مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی ،دونوں جماعتیں متفق ہیں کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے،الیکشن میں عوام کے مینڈیٹ کیساتھ بددیانتی ہوئی ہے۔

 


متعلقہ خبریں