ستمبر میں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ایک ارب11 کروڑ ڈالر رہا، اسٹیٹ بینک

state bank زرمبادلہ ذخائر

کراچی: اسٹیٹ بینک کے مطابق گزشتہ ماہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ایک ارب 11 کروڑ ڈالر رہا۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جاری رپورٹ کے مطابق ستمبر 2021 میں کرنٹ اکاونٹ خسارہ ایک ارب 11 کروڑ ڈالر رہا اور درآمدات 6 ارب 7 کروڑ ڈالر رہیں۔

گزشتہ ماہ میں برآمدات 2 ارب 64 کروڑ ڈالر رہیں جبکہ ستمبر کا تجارتی خسارہ 3 ارب 43 کروڑ ڈالر رہا۔ ستمبر میں تجارت، خدمات اور آمدن کا خسارہ 3.87 ارب ڈالر رہا۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں کرنٹ اکاونٹ خسارہ 3 ارب 40 کروڑ ڈالر رہا جبکہ مالی سال 2020 کی پہلی سہ ماہی میں کرنٹ اکاونٹ 86 کروڑ ڈالر سرپلس تھا۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان میں تاریخ کی بلند ترین سطح پر کیا کچھ؟

رواں مالی سال پہلی سہ ماہی میں ملکی درآمدات 17 ارب 47 کروڑ ڈالر رہیں اور پہلی سہ ماہی میں ملکی برآمدات 7 ارب 24 کروڑ ڈالر رہیں۔ جولائی سے ستمبر کے دوران ملکی تجارتی خسارہ 10 ارب 23 کروڑ ڈالر رہا۔

3 مہینوں میں تجارت، خدمات اور آمدن 11 ارب 91 کروڑ ڈالر رہیں اور 3 مہینوں میں ورکرز ترسیلات 8 ارب 3 کروڑ ڈالر رہیں۔


متعلقہ خبریں