ہوشیار: کراچی میں آج بھی ہلکی و تیز بارش ہونے کا امکان

کراچی: بارش کے دوران پیش آنے والے حادثات میں 18 افراد جاں بحق

کراچی: محکمہ موسمیات نے گزشتہ روز کی طرح آج بھی شہر قائد میں کہیں ہلکی اور کہیں تیز بارش ہونے کا امکان ظاہر کیا ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ روز سے شروع ہونے والی بارش کا سلسلہ منگل تک وقفے وقفے سے جاری رہ سکتا ہے۔

کراچی کی سڑکوں سے چار گھنٹوں میں پانی ختم ہو گیا، وزیراعلیٰ سندھ

کراچی میں گزشتہ روز گرج چمک کے ساتھ ہونے والی بارش کے نتیجے میں سیلابی ریلے کی کیفیت پیدا ہوگئی تھی جب کہ سڑکیں ندی نالوں کا منظر پیش کررہی تھیں۔ شہر کے کچھ علاقوں میں نالے ابل گئے تھے اورگندا پانی کئی علاقوں کے گھروں میں داخل ہوگیا تھا جب کہ گلیاں تالاب کے مناظر پیش کررہی تھیں۔

ہم نیوز کے مطابق متعدد گاڑیاں انجن بند ہوجانے کے باعث پانی میں ڈوب گئی تھیں، بسیں خراب ہو کر ٹریفک کی روانی میں خلل کا سبب بن رہی تھیں اور موٹرسائیکل سوار اپنی بند گاڑیوں کو دھکا دے کر انہیں پانی سے نکالنے کی کوشش کررہے تھے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی میں گزشتہ روز سب سے زیادہ بارش سرجانی ٹاؤن میں ہوئی تھی جو 170 ملی میٹرریکارڈ کی گئی ہے جب کہ نیوکراچی میں 88 ملی میٹر اور ناظم آباد میں 85.6 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے۔

کراچی ڈوب گیا، بلاول نکل کر دیکھیں شہر کا کیا حال ہوا ہے؟ خرم شیر زمان

دستیاب اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ روز گلشن حدید میں 77 ملی میٹر، پی اے ایف بیس مسرور میں44.5 ملی میٹر اور لانڈھی میں 20.5 ملی میٹر بارش ہوئی تھی۔

کراچی میں بارش ہوتے ہی جب سڑکیں ندی نالوں کا منظر پیش کرنے لگیں، گلیاں تالاب اور محلے سوئمنگ پولز میں تبدیل ہوئے تو ٹریفک کی روانی بھی بری طرح متاثرہوئی۔

سندھ رینجرز ایسی صورتحال میں فوری طورپر شہریوں کی مدد کے لیے پہنچی اور امدادی کاموں میں مصروف ہوگئی۔ سندھ رینجرز کے ترجمان کے مطابق رینجرز نے ٹریفک کی روانی بحال کرانے میں ٹریفک پولیس کی بھرپور مدد کی۔

کراچی میں ہونے والی تیز بارش کے بعد نادرن بائی پاس پر بھی ٹریفک جام ہو گیا اور لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

کراچی: مختلف علاقوں میں بارش، آسمانی بجلی گرنے سے دو افراد جاں بحق

گزشتہ روز شہر قائد میں ہونے والی بارش کے باعث بجلی کی فراہمی بھی متاثر ہوئی۔ درجنوں فیڈرز ٹرپ کر جانے کے نتیجے میں ناظم آباد، نارتھ ناظم آباد، نیوکراچی، لیاقت آباد، نصرت بھٹو کالونی، سہراب گوٹھ، سرجانی ٹاون، گلشن اقبال، گلشن حدید، رزاق آباد، کاٹھور اور گڈاپ سمیت دیگر کئی علاقوں میں بجلی کی فراہمی متاثر ہوئی ہے۔

ہم نیوز کو مختلف علاقہ مکینوں نے بتایا ہے کہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ بھی بڑھا یا گیا ہے۔ ایسے علاقوں سے بھی لوڈ شیڈنگ کی اطلاعات مل رہی ہیں جو اس سے مستشنیٰ قرار  دیے گئے ہیں۔ مکینوں کے مطابق لوڈ شیڈنگ کے دورانیے میں بھی اضافہ کردیا گیا ہے۔

ادارہ فراہمی و نکاسی آب کے ذمہ دار ذرائع کے مطابق دھابیجی پمپنگ اسٹیشن پر بجلی کی فراہمی میں آنے والے تعطل کے سبب پائپ لائن پھٹ گئی ہے۔ 72 انچ قطر کی پائپ لائن پھٹنے سے شہر کے مختلف علاقوں کو پانی کی فراہمی معطل ہوئی ہے۔

ایم ڈی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کا کہنا ہے کہ پھٹنے والی پائپ لائن کی مرمت میں کل دوپہر تک کا وقت درکار ہو گا۔

کراچی: پائپ لائن پھٹ گئی، شہر کو پانی کی فراہمی متاثر

ہم نیوز کے مطابق کے الیکٹرک کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دھابیجی پمپنگ اسٹیشن پربجلی کی فراہمی میں عارضی تعطل آیا تھا جسے بحال کردیا گیا ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق واٹربورڈ کےتمام پمپنگ اسٹیشنز پر بجلی کی فراہمی جاری ہے۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ گلشن حدید، بن قاسم اور ناظم آباد کے متاثرہ علاقوں میں بجلی بحالی کاعمل جاری ہے۔

ہم نیوز کے مطابق ترجمان کا کہنا ہے کہ نارتھ کراچی، بلدیہ، صدراورایف بی ایریا کےمتاثرہ حصوں میں بھی بجلی بحالی کاعمل جاری ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ سڑک پرموجود کھڑے پانی کے باعث احتیاطی طورپرچند مقامات پہ بجلی بندکی گئی تھی۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ بارش کے باعث متاثر ہونے والے زیادہ ترفیڈرزکی بجلی بحال کردی گئی ہے۔

کراچی: وزیراعظم نے فوج، این ڈی ایم اے اور ایف ڈبلیو او سے مدد طلب کرلی

کراچی میں گزشتہ روز ہونے والی بارش کے دوران چار افراد مختلف حادثات کی وجہ سے داعی اجل کو لبیک کہہ گئے تھے۔ چارمیں سے دو افراد آسمانی بجلی گرنے کی وجہ سے اپنی جانوں کی بازیاں ہارے تھے۔


متعلقہ خبریں