ڈیرہ مراد جمالی، شہری مضر صحت پانی پینے پر مجبور


ڈیرہ مراد جمالی: بلوچستان کے ضلع ڈیرہ مراد جمالی میں کروڑوں روپے خرچ ہونے کے باوجود شہری مضر صحت پانی پینے پر مجبور ہیں۔

ڈیرہ مراد جمالی کے شہریوں کو صاف پانی کی فراہمی  کے لیے کروڑوں روپے کے فنڈز محکمہ پی ایچ ای کو فراہم کیے گئے لیکن عوام تک صاف پانی کی فراہمی تاحال ممکن نہ ہو سکی۔

ڈیرہ مراد جمالی میں جگہ جگہ پائپ لائنیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں جس کی وجہ سے شہری صاف پانی سے محروم ہیں۔ پائپ لائنوں کی مرمت نہ ہونے کے باعث پینے کا صاف پانی سیوریج کے پانی سے آلودہ ہو کر گھروں اور تجارتی مقامات پر پہنچتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں پاکستانی سائنسدان نے کورونا وائرس کا ویکسینیشن ماڈل تیار کرلیا

عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ متعلقہ محکمے کے افسران ٹوٹی ہوئی پائپ لائنوں کی مرمت کرائیں تاکہ عوام کو پینے کا صاف میسر ہو اور عوام موذی امراض سے بچ سکیں۔


متعلقہ خبریں