پنجاب: اب کوئی بی اے، بی ایس سی نہیں کر سکے گا

پنجاب: اب کوئی بی اے، بی ایس سی نہیں کر سکے گا

فائل فوٹو


لاہور:محکمہ تعلیم پنجاب نے رواں سال اگست سے دو سالہ بیچلر آف آرٹس(بی اے) اور بیچلر آف سائنس(بی ایس سی) کی ڈگری بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

محکمہ ہائرایجوکیشن نے مذکورہ ڈگریاں بند کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے تعلیمی اداروں کو ہدایت کی ہے کہ بی اے بی، ایس سی کی جگہ نئی اور جدید دو سالہ ایسوسی ایٹ ڈگری کا آغاز ہو گا۔

ایسوسی ایٹ ڈگری میں طلبا جنرل مضامین کی جگہ اسپیشلائزڈ مضامین رکھ سکیں گے اور مختلف مضامین پر مشتمل بی اے کے بجائے سپیشلائزڈ سبجیکٹ پر ایسوسی ایٹ ڈگری حاصل کریں گے۔

ٹیکنالوجی، انڈسٹری، تعلقات عامہ سے متعلق اسپیشلائزڈ مضامین بھی ڈگری کا حصہ ہوں گے جن میں طلبا کوتعلیم دی جائے گی۔

ایسوسی ایٹ ڈگری کے تحت طلبا کو نمبرز کے حصول کیلئے پریکٹیکل ٹریننگ کرنا ہونگی اور کوارڈی نیٹرز بھی رکھنا ہوں گے۔

پہلے سال بی اے، بی ایس کے سبجیکٹ کو ایسو سی ایٹ ڈگری میں شامل کیا جائے گا اور آئندہ سال نئے جدید اسپیشلائزڈ مضامین نصاب کا حصہ بنائے جائیں گے۔

پنجاب کےمحکمہ ہائیرایجوکیشن نے دو سالہ بی اے، بی ایس سی پروگرام فوری طور پر بند کرنے ہدایت کرتے ہوئے جامعات کو رواں سال اگست میں دو سالہ ایسوسی ایٹ ڈگریوں میں داخلے کرنے کا کہا ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق 31 دسمبر 2018ء سے پہلے بی اے، بی ایس سی میں رجسٹریشن کرانے والے طلبا 31 دسبمر 2020 تک اپنی ڈگریاں مکمل کر سکتے ہیں اور انہیں ایسوسی ایٹ ڈگریاں جاری کی جائیں گی۔

محکمہ ہائیر ایجوکیشن نے یونیورسٹیوں کو ایسوسی ایٹ ڈگری پروگرام کے لیے اپنے اپنے کوارڈینیٹرز مقرر کرنے کی ہدایت کردی ہے جو ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے ساتھ  بطور لائزون آفیسر کام کریں گے۔

مراسلے کے مطابق 2020 کے بعد پنجاب میں دو سالہ ایم اے، ایم ایس سی کی ڈگری بھی بند کر دی جائے گی۔


متعلقہ خبریں