صوبائی وزیر کی ایئرپورٹ حکام سے بدتمیزی، چیف جسٹس کا نوٹس


لاہور:چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثارنے اسلام آباد ایئرپورٹ پر گلگت بلتستان کے وزیرسیاحت فدا حسین کی بدتمیزی کا نوٹس لیتے ہوئے دونوں فریقین کو کل لاہور رجسٹری طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر گزشتہ روز پی آئی اے کی گلگت جانے والی پرواز منسوخ ہوئی تو صوبائی وزیر سیاحت گلگت بلتستان فدا حسین نے بدتمیزی کرتے ہوئے پی آئی اے افسر کو دھکے مارے۔

پی آئی اے اور سول ایوی ایشن نے معاملے پر چپ سادھ لی اور ایکشن کے لیے ایک دوسرے کا انتظار کرتے رہے۔

خبر نشر ہونے پر چیف جسٹس نے ازخود نوٹس لیتے ہوئے گلگت بلتستان کے وزیر سیاحت فدا حسین اور اسلام آباد ائیر پورٹ کے انچارج کو کل سپریم کورٹ رجسٹری لاہور میں پیش ہونے کا حکم دے دیا ہے۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں بنچ کل سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں کیس کی سماعت کرے گا۔

دوسری جانب گلگت بلتستان حکومت کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پہلے گلگت بلتستان کے وزراء کے ساتھ بدتمیزی کی گئی، وزیرسیاحت فدا خان کو عملے نے جھوٹ بول کر جذباتی کیا، معاملہ رفع دفع ہوگیا ہے اور اگر وزرا کے رویئے سے کسی کی دل آزاری ہوئی تو معذرت کرتے ہیں۔

واضح رہے کہ اسلام آباد ائیر پورٹ پر موسم کی خرابی کے باعث فلائٹ تاخیر کا شکار ہوئی تو پی ٹی آئی کےصوبائی وزیر فدا حسین آگ بگولہ ہوگئے اور شفٹ انچارچ سے بدتمیزی کی اور دھکے دیئے تھے۔

صوبائی وزیر کی جانب سے کی جانے والی بدتمیزی کی ویڈیو ایئر پورٹ پر موجود کسی نامعلوم شخص نے اپنے موبائل فون کیمرے میں عکس بند کرلی تھی۔

ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کردی گئی اور الیکٹرونک میڈیا کے ذریعے یہ خبر پورے ملک میں پھیل گئی۔


متعلقہ خبریں