‘بین الاقوامی برادری کشمیری، فلسطینی بچوں کے مصائب پر توجہ دے’


نیویارک: اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے بین الاقوامی برادری کی توجہ کشمیر اور فلسطین میں بچوں کو درپیش مصائب، مظالم اور مشکلات کی طرف دلائی۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے بچوں کے حقوق کے تحفظ کے حوالے سے کمیٹی کے اجلاس کے دوران مباحثہ میں حصہ لیتے ہوئے ملیحہ لودھی نے اس بات پر زور دیا کہ عالمی برادری کو بچوں خصوصاً جنگ زدہ اور بیروںی تسلط والے علاقوں میں رہنے والے بچوں کی حفاظت پر خصوصی توجہ دیں ۔

ملیحہ لودھی نے بین الاقوامی برادری کو کشمیر اور فلسطین کے بچوں  کو درپیش مظالمم، مصائب اور مشکلات کے بارے میں اگاہ کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ کشمیر اور فلسطین کے بچے تشدد کے بھنور میں پھنسے ہوئے ہیں اور انہیں روزانہ انتھائی خوف اور ڈر کا سامنا ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ان بچوں تک پہنچا جائے جو جنگوں، معاشی تغیر، غربت اور ماحولیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے مصائب کا شکار ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ جنگ بچوں کے ہرممکن حق کو ختم کرتا ہے اور ٹارگٹڈ حملہ، جنسی تشدد اور جبری مشقت کے نتیجے میں ہونے والا صدمہ ان کی باقی ماندہ زندگی کو تباہ کردیتا ہے۔

انہوں نے کہا بچوں کو مناسب جسمانی اور ذہنی صحت، تعلیم، خوراک، لباس، رہائش اورغذائی قلت سے پاک مستقبل کی فراہمی کو یقینی بنانا عالمی برادری کا مشترکہ کمٹمنٹ ہے۔

ملیحہ لودھی نے پاکستان کی جانب سے بچوں کے حقوق کے تحفظ اور پروموشن کو ترجیح دینے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ملک بچوں پر سرمایہ کاری کو ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لئے انتھائی اہم سمجھتا ہے۔

ان کا کہنا تھا پاکستان کا کمٹمنٹ اس بات سے واضح ہوتا ہے کہ پاکستان بچوں کے حقوق کے حوالے سے کنونشن پر دستخط کرنے والے ابتدائی ممالک میں سے ہیں۔

پاکستانی سفیر نے حکومت کی جانب بچوں کے حقوق کے حوالے سے حالیہ دنوں میں لیے جانے والے پالیسی اقدامات سے بھی آگاہ کیا ۔


متعلقہ خبریں