عابد باکسر کو پولیس نے رہا کر دیا


 

لاہور: سابق پولیس افسر عابد باکسر کو پولیس نے رہا کر دیا، عابد باکسر نے تھانہ نوانکوٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جب بھی تفتیش کے لئے بلایا جائے گا میں حاضر ہوں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ تفتیش میں تمام سوالات کے جوابات دیے ہیں اور تفتیش میں اپنی بے گناہی بھی ثابت کی ہے۔

سابق سپریٹینڈنٹ پولیس عمر ورک کا نام لیتے ہوئے عابد باکسر کا کہنا تھا کہ ان کا وار خالی چلا گیا ہے، وہ ایسی سازشیں کرتے رہتے ہیں اور آئندہ بھی کرتے رہیں گے مگر پرانے پولیس افسران ناکام ہو گئے ہیں اور اب میرٹ پرتفتیش کی جارہی ہے۔

عابد باکسر کا کہنا تھا کہ امید کرتا ہوں یہ حکومت میرٹ پر کام کرے گی اور انصاف دے گی کیونکہ اس حکومت سے مجھے زیادتی کی امید نہیں ہے۔

اس سے قبل پنجاب پولیس کے سابق افسر اور ماضی میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے دست راست سمجھے جانے والے عابد باکسر کو سی آئی اے پولیس نے دوران تفتیش مدعی سے تلخ کلامی کرنے پر گرفتار کرلیا تھا۔

سی آئی اے پولیس کے مطابق عابد باکسر کے خلاف تھانہ ملت پارک میں قتل کا مقدمہ درج ہے اور اسی حوالے سے اُنہیں اور مدعی مقدمہ منا فردوسی کو طلب کیا گیا تھا۔

مدعی اور عابد باکسر کی سی آئی اے سینٹر میں تلخ کلامی ہوئی جو بعد ازاں ہاتھا پائی تک جا پہنچی جس کے بعد سی آئی اے پولیس نے دونوں فریقین کو انسدادی کارروائی کرتے ہوئے حوالات میں بند کر دیا تھا۔


متعلقہ خبریں