ٹیکس عائد کئے جانے کے بعد چینی، گھی اور آئل کی قیمتوں میں اضافہ

گھی اور آئل oil and ghee

حکومت کی جانب سے مختلف ٹیکسز عائد کئے جانے کے بعد عام مارکیٹ میں چینی، گھی اور آئل اور دیگر اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔

چینی کی بوری 6700 روپے میں فروخت ہو رہی تھی وہ 250 روپے اضافے کے ساتھ 6950 روپے کی ہوگئی ہے۔ اسی طرح گھی کے کارٹن پر 300 روپے اضافہ ہو گیا ہے۔

فلور ملز کی ہڑتال، آٹے کا بحران پیدا ہونے کا خدشہ

کھلا آئل 380 سے بڑھ کر 420 روپے، دال مونگ 280 سے بڑھ کر 340 روپے، دال چنا280 سے 320 روپے ہوگئی ہے، اس کے علاوہ آٹا، خشک دودھ، ڈبے والے دودھ سمیت دیگر اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔ اس طرح چینی، گھی اور آئل کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا گیا ہے۔

عام مارکیٹ میں یہ اضافہ خود ساختہ ہے یا پھر حکومت کی جانب سے عائد کئے گئے ٹیکسز اس کی وجہ ہیں لیکن اس اضافے سے عام شہری کی پریشانی میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔


متعلقہ خبریں