جنوبی وزیرستان میں دہشت گردوں سے فائرنگ کا تبادلہ،3 سپاہی شہید

ISPR

راولپنڈی: جنوبی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان شدید فائرنگ کے تبادلہ میں پاک فوج کے 3 جوان شہید ہوگئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق جنوبی وزیرستان میں 9 جولائی کو سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس کے دوران 3 جوان شہید ہو گئے۔

جام شہادت نوش کرنے والوں میں ضلع میٹاری کے رہائشی 30 سالہ سپاہی اسد اللہ، ڈی آئی خان سے تعلق رکھنے والے سپاہی 28 سالہ محمد سفیان، اور بہاولنگر سے تعلق رکھنے والے سپاہی 24 سالہ زین علی شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: بجلی صارفین کو ریلیف کی فراہمی پر آئی ایم ایف کو سمجھا دیا گیا ہے ، مصدق ملک

آئی ایس پی آر کے مطابق علاقے میں موجود دیگر دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے کارروائی جاری ہے۔ پاکستانی سیکیورٹی فورسز ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پرعزم ہیں۔

دوسری جانب شمالی وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران دہشت گردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں 2 دہشتگرد مارے گئے جبکہ پاک فوج کے کیپٹن جام شہادت نوش کر گئے۔

واضح رہے کہ شہید کیپٹن محمد اسامہ بن ارشد کا تعلق راولپنڈی سے ہے۔ انہوں نے اکتوبر 2020 میں پاکستان آرمی کی این ایل آئی رجمنٹ میں کمیشن حاصل کیا۔ 24 سالہ کیپٹن محمد اسامہ بن ارشد نے 4 سال تک دفاع وطن کا مقدس فرائض سرانجام دیئے۔ کیپٹن محمد اسامہ بن ارشد کے سوگواران میں والد، والدہ، بھائی اور 4 بہنیں شامل ہیں۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں