عوام الناس جعلی نوٹسز پر کوئی ذاتی معلومات ہرگز فراہم نہ کریں، ایف آئی اے

fia

ایف آئی اے نے کہا ہے کہ عوام الناس سوشل میڈ یا پر موصول ہونے والے جعلی نوٹسز پر کوئی ذاتی معلومات ہرگز فراہم نہ کریں۔

ترجمان ایف آئی اے کی طرف سے جاری بیان میں عوام الناس کو آگاہ کیا گیا ہے کہ ان جعلی نوٹسسز پر وصول کنندگان کے مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی جعلی تفصیلات درج ہوتی ہیں اور قانونی کارروائی کی دھمکیاں دے کر یا فوری مالی معاوضہ طلب کرکے خوفزدہ کرنے کا طریقہ استعمال کیا جاتاہے ۔

کریم آبادجیپ حادثے میں جاں بحق افراد کی تعداد 16 ہو گئی

ایف آئی اے اپنے تمام رابطوں میں سخت ترین پروٹوکول پر عمل پیرا ہے۔ خیال رہے کہ ایف آئی اے میں کسی بھی سرکاری رابطے کا آغاز ایک مکمل تحقیقات اور واضح طور پر شناخت شدہ کیس نمبر کے بعد ہی کیا جاتا ہے۔

ایف آئی اے کبھی بھی حساس معلومات، جیسے بینکنگ کی تفصیلات، نوٹسز یا فون کالز کے ذریعے طلب نہیں کرتا ہے۔

بلوں میں ٹیکسز کا ہمارے محکمے سے کوئی تعلق نہیں، وفاقی وزیر توانائی

رابطے کی قانونی حیثیت کی تصدیق کے لیے ہیلپ لائن 1991 یا اپنے قریبی ایف آئی اے سرکل سے رابطہ کیاجائے۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں