چیئرمین سینٹ ، سپیکر آفس نے سائفر کی ڈی کلاسیفائیڈ کاپیاں وزارت خارجہ میں جمع کرا دیں

وزارت خارجہ

سائفر کی ڈی کلاسیفائیڈ تمام کاپیاں وزارت خارجہ کو واپس موصول ہو گئیں ، پی ٹی آئی حکومت میں سائفر کاپیاں سپیکر قومی اسمبلی اور چیئرمین سینیٹ آفس کو ارسال کی گئی تھیں۔

ذرائع کے مطابق سائفر کی ڈی کلاسیفائیڈ کاپیاں سپیکر اور چیئرمین سینیٹ آفس سے واپس دفتر خارجہ جمع کرائی گئی ، 2023 میں سائفر کیس عدالتوں میں زیر سماعت تھا، وزارت خارجہ کی جانب سے سپیکر اور چیئرمین سینیٹ کو سائفر کی کاپیاں واپس مانگنے کیلئے خط لکھا گیا۔

سائفرکیس،سابق چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمودقریشی بری،رہائی کا حکم

سپیکر اور چیئرمین سینیٹ آفس نے سکیورٹی پروٹوکول کے تحت دونوں کاپیاں واپس وزارت خارجہ کو ارسال کیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت خارجہ نے یہ اقدام سائفر کے مزید سیاسی مقاصد کے استعمال سے روکنے کیلئے کیا تھا، سائفر کو دونوں ایوانوں میں زیر بحث لانے کیلئے سپیکر اور چیئرمین سینیٹ کو ارسال کیا گیا تھا۔

 


متعلقہ خبریں