رؤف حسن پر حملے کا مقدمہ نامعلوم خواجہ سرائوں کیخلاف درج ، اقدام قتل اور دیگر دفعات شامل

رؤف حسن

تحریک انصاف کے سیکریٹری اطلاعات رؤف حسن پر حملے کا مقدمہ تھانہ آبپارہ میں درج کر لیا گیا۔

رؤف حسن کی مدعیت میں نامعلوم خواجہ سراؤں کے خلاف درج مقدمے میں اقدام قتل، جان سے مارنے کی دھمکیوں سمیت دیگر دفعات شامل ہیں۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق ٹی وی پروگرام میں شرکت کے بعد پارکنگ کی طرف جا رہا تھا کہ حملہ ہوا، بظاہر خواجہ سرا نظر آنے والے شخص نے مجھے روک کر حملہ کیا۔

پی ٹی آئی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات رؤف حسن پر حملہ

انہوں نے بتایا کہ اسی دوران مزید 3 خواجہ سرا جیسے افراد آ گئے اور جان لیوا حملہ کیا، جان سے مارنے کے لیے تیز دھار آلے سے میری گردن کاٹنے کی کوشش کی گئی، میں خود کو بچانے کے لیے پیچھے ہٹا تو میرے چہرے پر تیز دھار آلے سے کٹ لگا۔

انہوں نے ایف آئی آر میں کہا کہ 2 روز قبل بلیو ایریا میں بھی ایسے ہی حملے کی کوشش ہوئی تھی۔

ملک کے مستقبل کی کنجی اڈیالہ کے قیدی کے پاس ہے اس سے بات کرنا پڑے گی،رؤف حسن

واضح رہے کہ گزشتہ روز رؤف حسن پر جی سیون مرکز اسلام آباد میں خواجہ سراؤں نے بلیڈ سے حملہ کیا تھا جس میں ان کا چہرہ زخمی ہو گیا تھا۔


متعلقہ خبریں