موجودہ سولر پینل صارفین پروٹیکٹڈ رہیں گے ،وزارت توانائی نے تصدیق کر دی

سولر سسٹم solar

اسلام آباد (شہزاد پراچہ)وفاقی حکومت کی نیٹ میٹرنگ سے گراس میٹرنگ پر جانے کی حکمت عملی طے کر لی ، پاور ڈویژن کے حکام کی جانب سے نیٹ میٹرنگ پالیسی ختم کرنے کی تصدیق کر دی گئی۔

ذرائع پاور ڈویژن کے مطابق حکومت گراس میٹرنگ پالیسی کی طرف جا رہی ہے،ذرائع نے بتایا ہے کہ  موجودہ سولر پینل صارفین پروٹیکٹڈ رہیں گے اور ان کو پروٹیکٹڈ کیٹگری سے نہیں نکالا جائے گا۔ اس کے علاوہ نیٹ میٹرنگ پر جانیوالے نئے صارفین کو نان پروٹیکٹڈ کیٹگری میں رکھا جائے گا۔

ایرانی صدر ابراہیم ریئسی کے ہیلی کاپٹر کی ہنگامی لینڈنگ، جان کو خطرہ لاحق

ذرائع کے مطابق ملک بھر میں اب تک سوا لاکھ کے قریب نیٹ میٹرنگ پر چلے گئے ہیں اور جون 2023 تک نیٹ میٹرنگ والے بجلی صارفین کی تعداد 63 ہزار 703 تھی۔ نیٹ میٹرنگ کنکشنز کی مجموعی صلاحیت بڑھ کر 1735 میگاواٹ ہوگئی ہے اور جون 2024 تک نیٹ میٹرنگ بجلی کی صلاحیت 2100 میگاواٹ تک بڑھنے کا امکان ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ آف گرڈ سولر صارفین کی تعداد آن گرڈ صارفین سے کہیں زیادہ ہے، اور ڈیٹا کے مطابق اب تک 6800 میگاواٹ کے سولر پینل درآمد کر چکے ہیں۔

 


متعلقہ خبریں