مریم نواز نے ایجوکیشن ریفارمز بارے 5سالہ پلان کا شیڈول طلب کر لیا

school

وزیراعلیٰ پنجاب مریم نواز نے ایجوکیشن ریفارمز سے متعلق 5 سالہ پلان کا ماہانہ شیڈول طلب کر لیا۔

وزیراعلی پنجاب مریم نواز کی زیر صدارت اسکول ایجوکیشن ریفامز سے متعلق خصوصی اجلاس ہوا جس میں سینیٹر پرویز رشید،صوبائی وزرا مریم اورنگزیب، راناسکندر حیات، ایم پی اے ثانیہ عاشق، چیف سیکرٹری، سیکرٹری ایجوکیشن اور دیگر متعلقہ حکام شریک ہوئے۔

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 14 روپے تک کمی کا امکان

اجلاس میں پبلک اسکول ری آرگنائزیشن پروگرام کا تفصیلی جائزہ لیا گیا جبکہ سیکرٹری اسکول ایجوکیشن نے سکول نیوٹریشن پراجیکٹ پر پیش رفت سے وزیراعلی کو آگاہ کیا، مریم نوازنے ایجوکیشن ریفارمز کے پانچ سالہ پلان کا ماہانہ شیڈول طلب کرلیا۔

دوران اجلاس وزیراعلی مریم نواز نے پرائمری سکول ہیڈز کو 32 ہزار 298 کمپیوٹر ٹیب دینے کی منظوری دیدی جبکہ ایک ہزار ایلیمنٹری اسکولوں میں آئی ٹی اینڈ سائنس لیب قائم کرنے پر اتفاق ہوا،ایشیائی ترقیاتی بینک لیب کے قیام کے لئے 100ملین ڈالر کی مالی معاونت کرے گا۔

دبئی پراپرٹی لیکس، اہم پاکستانی شخصیات11 ارب ڈالر جائیداد کی مالک نکلیں

اجلاس میں سرکاری اسکولوں کے تین لاکھ بچوں کو گوگل سرٹیفکیشن کے لئے معاہدے کی اصولی منظوری بھی دے دی گئی، ڈیجیٹل سفر برائے ٹیک ویلی پراجیکٹ کے تحت طلبہ کو گوگل سرٹیفکیشن کے مواقع ملیں گے۔

اجلاس میں پنجاب ایجوکیشن کریکولم اینڈ ٹریننگ کے قیام کی تجاویز اور سفارشات کا بھی جائزہ لیا گیا جبکہ اس حوالے سے بریفنگ میں بتایا گیا کہ 92 فیصد سے زائد مفت کتابیں ڈیلیور کی جاچکی ہیں۔

اجلاس کے شرکا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلی پنجاب مریم نواز کا کہنا تھا کہ سرکاری اسکولوں میں کوالٹی آف ایجوکیشن کوہر صورت بہتر کرنا ہے۔


متعلقہ خبریں