برطانوی بلدیاتی انتخابات، پاکستانی نژاد کونسلر کامیاب، حکومتی ڈپٹی لیڈر کو شکست

London Election

لندن: برطانوی شہر مانچسٹر کے بلدیاتی انتخابات میں لیبر پارٹی کے ڈپٹی لیڈر لطف الرحمٰن 16 سال بعد اپنی نشست ہار گئے۔ پاکستان نژاد شہباز سرور نے کامیابی حاصل کر لی۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق برطانیہ کی حکومتی جماعت “لیبر پارٹی” کے  ڈپٹی لیڈر مانچسٹر سٹی کونسل لطف الرحمان 16 سال بعد بلدیاتی انتخابات میں اپنی نشست ہار گئے۔

ممبر پارلیمنٹ جارج گیلوے کی “ورکرز پارٹی” کے امیدوار پاکستانی نژاد شہباز سرور نے کامیابی حاصل کر لی۔ فاتح امیدوار شہباز سرور نے 2 ہزار 444 ووٹ حاصل کیے جبکہ لطف الرحمان نے 2 ہزار 259 ووٹ حاصل کیے۔

انگلینڈ اور ویلز کے بلدیاتی انتخابات میں حکومتی پارٹی کے 228 امیدوار میدان میں موجود تھے جو اپنی سیٹ کا دفاع نہ کر سکے۔ برطانوی وزیراعظم رشی سونک کے ذاتی حلقہ رچمنڈ یارک سے بھی لیبر پارٹی کے امیدوار کامیاب ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں: سرحدی کشیدگی، ایران کا افغانستان کے ساتھ بارڈر سیل کرنے کا فیصلہ

انگلینڈ اور ویلز کی 107 میں سے 55 کونسلز کے ووٹوں کی گنتی مکمل ہو چکی، لیبر پارٹی کے 838، کنزرویٹو کے 318، لیبر ڈیموکریٹس کے 278 اور آزاد امیدواروں کی تعداد 178 ہے۔

واضح رہے کہ انگلینڈ اور ویلز کی 107 کونسلز کی 2 ہزار 636 سیٹوں کے لئے انتخاب میں ووٹنگ ہوئی، ڈپٹی لیڈر مانچسٹر سٹی کونسل لطف الرحمان 16 سال سے مانچسٹر سٹی کونسل کے کونسلر تھے اور وہ چوتھی بار اپنی نشست کا دفاع کررہے تھے۔


ٹیگز :
متعلقہ خبریں