ایموجی بھیجنے پر کمپنی کے مالک پر بھاری جرمانہ


اوٹاوا: کینیڈا میں ایموجی بھیجنے پر کمپنی کے مالک کو ایک کروڑ 70 لاکھ روپے کا جرمانہ ادا کرنا پڑ گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق کینیڈا کے صوبے سسکیچوان میں تھمزب-اپ ایموجی کی وجہ سے پیدا ہونے والی ایک معمولی سی کنفیوژن پر کاشتکاری کمپنی کے مالک پر تقریباً 61،000 جرمانہ عائد کر دیا گیا جو پاکستانی ایک روڑ 70 لاکھ روپے سے زائد بنتے ہیں۔

کینیڈا کی ایک عدالت نے کاروبار میں معاہدے کی شرائط قبول کرنے کے لیے تھمبز-اپ کی تصویر کو کافی قرار دیا اور کمپنی کے مالک پر جرمانہ عائد کر دیا گیا۔

کاشتکاری کمپنی کے مالک کرس ایکٹر کو ایک اناج خریدار نے فلیکس خریدنے کے معاہدے کی تصویر بھیجی تھی جس کے جواب میں کرس نے انگوٹھے کا ایموجی بھیجا تاہم مہینوں بعد جب ڈیلیوری کا وقت آیا تو اناج خریدار کو فلیکس نہیں ملا۔ جس پر تنازعہ دونوں فریقین کو عدالت لے آیا۔

خریدار نے جج کے سامنے دلیل پیش کی کہ ایموجی کا مطلب “او کے” ہوتا ہے یعنی معاہدے کی شرائط منظور اور سودا پکا ہے۔

دوسری جانب کمپنی کے مالک نے مؤقف اختیار کیا کہ اس نے انگوٹھے کی تصویر کا استعمال صرف یہ بتانے کے لیے کیا کہ اسے میسج مل گیا ہے۔

عدالت میں مذکورہ بالا ایموجی کی 24 مثالوں پر مشتمل ایک سمری پیش کی گئی جس کو مدنظر رکھتے ہوئے جج نے کہا کہ اس ایموجی کا عام طور پر مطلب کسی بات پر اتفاق کرنا یا قبول کرنا ہوتا ہے۔

عدالت کے مطابق کرس نے انگوٹھے کی تصویر بھیج کر ایک طرح سے معاہدے کی شرائط کو قبول کرلیا تھا لہٰذا دستخط کی ضرورت کو کرس نے اپنے فون سے تھمبز-اپ ایموجی سے پورا کر لیا۔


متعلقہ خبریں