ریاست کے لیے آئی ایم ایف کی کڑی شرائط ماننے کو تیار ہیں، وزیراعظم


وزیرِ اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ ریاست کے لیے آئی ایم ایف کی کڑی شرائط ماننے کے لیے تیار ہیں، حکومتی اتحادیوں نے اپنی سیاست کو چھوڑ کر ریاست کو بچایا۔

نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے جائزہ اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کراچی میں پولیس اور رینجرز نے دہشتگردوں کا بہادری سے مقابلہ کیا،پشاور کے بعد کراچی میں دہشتگردی کا افسوسناک واقعہ پیش آیا جس کے بعد ایپکس کمیٹی کا اجلاس بلایا۔

انہوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان پر تمام جماعتوں کو دعوت دی،دعوت کے باوجود بھی وہ اجلاس میں شریک نہیں ہوئے،کچھ لوگوں کی ابھی بھی کوشش ہے کہ ملکی معاملات سڑکوں پر حل ہوں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اس وقت معاشی چیلنجز کا شکار ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ کچھ دنوں میں آئی ایم ایف سے معاہدہ ہو جائے گا،ایک دوست ملک ہے سب کا خیال تھا کہ وہ آئی ایم ایف معاہدہ کا انتظار کررہا ہے، ہمارا خیال تھا کہ وہ دوست ملک آئی ایم ایف معاہدہ کے بعد ہماری مدد کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو مشکل حالات سے ہم نے بچایا،اپنے گھر کے حالات خود درست کرنا ہوں گے،اگر ہم اپنے حالات خود ٹھیک نہیں کریں گے تو کوئی ہماری مدد کو نہیں آئے گا۔


متعلقہ خبریں