معروف ادا کار سہیل اصغر انتقال کر گئے


پاکستان کے معروف اور سینئر اداکار سہیل اصغر انتقال کر گئے۔

ہم نیوز کے مطابق سینئر ادا کار سہیل اصغر کچھ   ایک ہفتے سے علیل اور اسپتال میں داخل تھے، ان کا ڈیڑھ سال قبل  بڑی آنت کا آپریشن بھی ہوا تھا۔

سہیل اصغر کے اہل خانہ نے بھی ان  کے انتقال کی تصدیق کی ہے، اہل خانہ کے مطابق ان  کی نماز جنازہ کل نماز عصر کے بعد کراچی بحریہ ٹاون میں ادا کی جائے گی۔

سہیل اصغر نے لاہور سے اپنے کیریئر کا آغاز کیا، ان کے مشہور ٹی وی ڈراموں میں چاند گرہن، دکھ سکھ، خدا کی بستی،، لاگ، کاجل  گھر، حویلی، ریزہ ریزہ، پیاس اور دیگر ڈرامے شامل ہیں۔

سہیل اصغر نے 2003 میں بڑی اسکرین پر فلم مراد میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے   اور بعد میں فلم ماہ نور میں بھی کام کیا۔

سہیل اصغر کے انتقال کے سینئر اداکاروں نے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے، ادا کار سہیل احمد نے کہا کہ سہیل اصغر کے انتقال سے انڈسٹری کا بڑا نقصان ہواہے، وہ  بہترین مزاج کے مالک تھے، انہوں نے ڈراموں میں بہترین اداکاری کی ۔

اداکار توقیر ناصر نے کہا کہ سہیل اصغر کے انتقال پر افسوس ہوا ،وہ  بہترین شخصیت کے مالک تھے،انہوں نے جونیئر اداکاروں کے ساتھ شفقت کارویہ اپنایا۔

توقیرناصر نے کہا کہ وہ  بیمار تھے کسی کو پتہ نہیں چلا اور نہ ہی کسی نے ان کو پوچھا ،اداکار قومی اثاثہ ہیں ،حکومت ان کے لیے اقدام اٹھائے۔

اداکار عدنان صدیقی نے کہا کہ سہیل اصغر  بہترین انسان تھے، ان کے انتقال پر دکھ ہوا۔

معروف اداکار جاوید شیخ نے کہا کہ سہیل اصغر بہترین اداکار تھے، ان کے انتقال پر افسوس ہوا ،حکومت سے اپیل ہے اداکارو ں کے لیے کوئی اقدام کرے۔

ڈرامہ نگار اصغر ندیم سید نے کہا کہ سہیل اصغر کے انتقال سے ٹی وی انڈسٹری کا نقصان ہوا،انہوں نے میرا پہلا سیریل آسمان میں اداکاری کی، ان سے دوستی کا رشتہ تھا، وہ سندھی،سرائیکی زبان سمیت ہرلہجے میں اداکاری پرعبوررکھتے تھے۔


متعلقہ خبریں