عظیم صوفی شاعر وارث شاہ کے 221ویں عرس کی تین روزہ تقریبات


لاہور: عظیم صوفی شاعر پیر سید وارث شاہ کے 221ویں عرس کی تین روزہ تقریبات جاری ہیں۔ جنڈیالہ شیر خان میں عرس کے پہلے روز پنحابی مشاعرہ منعقد کیا گیا۔

عرس کی تقریبات میں ملک بھر سے خواتین، بچے اور بیرون ممالک سے زائرین خصوصی طور پر جنڈیالہ شیرخان پہنچے۔

برصغیر پاک و ہند میں بسنے والی اقوام کے مشاہیر کو دنیا بھر میں ایک خاص مقام حاصل ہے جنہوں نے ذہنی کمالات کو بروئے کار لاتے ہوئے اپنے اپنے خیالات کو موتیوں کی لڑی میں پروکر مخلوق خدا کی رہنمائی کرتے ہوئے اِن کو سیدھا راستہ دکھایا۔

صوفی بزرگ اور پنجابی زبان کے شیکسپیئر پیرسید وارث شاہ کے عرس میں شرکت کے لیے ان کے چاہنے والوں کی آمد جاری ہے۔ عرس کے پہلے روز والی بال کے مقابلے ہوئے اور پنجابی مشاعرہ بھی منعقد کیا گیا۔

وارث شاہ نے پنجاب کے لوگوں کے دل اپنے شاعری کے ذریعے موہ لیے ، پیر وارث شاہ کو پنجابی زبان میں جو مقام و مرتبہ حاصل ہے وہ کسی اور شاعر کو حاصل نہیں۔

پیرسید وارث شاہ کی شاعری امن اور محبت کا درس دینے کے ساتھ ساتھ روحانی تسکین کا باعث بھی بنتی ہے۔

یہ بھی پڑھیے: شاہ عبدالطیف بھٹائی کے عرس کی تقریبات شروع، گرونانک کی نومبر میں ہوں گی


متعلقہ خبریں